عمران خان کی قیادت میں مسئلہ کشمیر کو دنیا کے ہر فورم میں اٹھائیں گے: شبلی فراز

      عمران خان کی قیادت میں مسئلہ کشمیر کو دنیا کے ہر فورم میں اٹھائیں گے: ...

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)وفاقی وزیر برائے قومی غذائی تحفظ و تحقیق سید فخر امام نے کہا ہے کہ بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے کے بعد دنیا میں نئی دہلی کے حوالے سے نکتہ نظر میں بنیادی تبدیلی آئی ہے۔اسلام آباد میں ”کشمیر محاصرے میں ہے“کے عنوان سے سیمینار میں خطاب کے دوران سید فخرامام نے کہا کہ 5اگست کا بھارتی اقدام اقوام متحدہ کی قراردادوں کی خلاف ورزی ہے۔ اقوام متحدہ کی واضح قراردادیں ہونے کے باوجود کشمیریوں کو بنیادی حق خودارادیت سے محروم رکھا جارہا ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں متاثر کن تقریر میں دنیا کے لیے جن بڑے خطرات کی نشاندہی کی ان میں ایک تنازع کشمیر بھی ہے۔جواہر لعل نہرو کشمیر کا معاملہ اقوام متحدہ میں لے کر گئے۔ جواہر لعل نہرو ایک کشمیری پنڈت تھے جو کشمیر نہیں دینا چاہتے تھے۔انہوں نے کہا کہ مغربی ہمالیہ میں واقع لداخ میں بھارت کو پسپائی کا سامنا کرنا پڑا ہے دوسری جانب چین اور ایران کے درمیان 400ارب ڈالر معاہدے ہوئے ہیں۔ چین علاقے میں اپنا اثرورسوخ بڑھا رہا ہے جس کا نقصان بھارت کو ہو گا۔وزیراطلاعات شبلی فراز نے کہا کہ بھارت کئی دہائیوں سے کشمیریوں کے حقوق غصب کر رہا ہے اور غیرآئینی اقدام کے بعد کشمیر کی جغرافیائی حیثیت بدلنے کی کوشش کر رہا ہے۔وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں مسئلہ کشمیر کو دنیا کے ہر فورم میں اٹھائیں گے۔ بھارت گزشتہ کئی دہائیوں سے کشمیریوں کا حق خودارادیت دبانے کی کوشش کررہا ہے۔ گزشتہ سال 5 اگست کے غیر قانونی اقدام سے کشمیریوں کو سنگین صورتحال کا سامنا ہے۔آزاد کشمیر کے صدر سردار مسعود خان نے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں سے اپیل کی ہے کہ کشمیریوں کے حقوق سے متعلق آواز اٹھانے میں کردار ادا کریں۔

شبلی فراز

مزید :

صفحہ اول -