کراچی، گوشت فروشوں کا بھی نرخوں میں اضافے کا مطالبہ

کراچی، گوشت فروشوں کا بھی نرخوں میں اضافے کا مطالبہ

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)میٹ مرچنٹس ایسوسی ایشن کے صدر حاجی عبدالمجید قریشی لانڈھی والے نے حکومت سندھ کی جانب سے مویشی منڈی میں خرید وفروخت کے اوقات صبح چھ بجے سے شام سات بجے تک مقرر کیے جانے کوغیردانش مندانہ فیصلہ قراردیتے ہو ئے تشویش ظاہر کی ہے کہ محدود اوقات مکورونا وائرس کے پھیلا کا سبب بن سکتے ہیں ان کا کہنا تھا کہ ماہ ذی الحج کیآغازمیں ہی کراچی کے شہری بڑی تعداد میں منڈیوں کارخ کریں گے محدود وقت میں زیادہ خریداروں کی موجودگی سے ہجوم لگ سکتا ہیاور بدانتظامی جنم لیسکتی ہے انہوں نے مطالبہ کیا کہ فوری طور پر ذی الحج کیپہلے عشرے کے دوران مویشی منڈی کے اوقات کار چوبیس گھنٹے کردیے جائیں تاکہ بیوپاریوں اور خریداروں کو آ سانی ہو یہ باتیں انہوں نے میٹ مرچنٹس اوردیگرمنسلک کاروبار ی افراد کو درپیش مسائل پر غور کے لیے طلب کییگئے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہیں اجلاس میں ان کے علاوہ جنرل سیکرٹری سکندر اقبال،شریف قریشی،شاہد حسین قریشی،حاجی عبداللہ،رئیس ننھا سراج الدین قریشی،کامل قریشی اورہارون قریشی سمیت دیگر اراکین ایگزیکٹو کمیٹی نے بھی اظہار خیال کیاحاجی عبد المجید قریشی نے اس امر پر بھی تشویش کا اظہار کیا کہ گوشت کے سات سال قبل مقرر کیے گئے نرخوں پر مجسٹریٹ صاحبان کی جانب سیآج گرفتاریاں اور بھاری جرمانے کیے جارہے ہیں انہوں استفسارکیاکہ سات برس کے دوران ملک میں اشیائے خوردونوش میں سے کسی کے نرخ نہیں بڑھے جو گوشت کے نرخ نہیں بڑھائے گئے انہوں نے مطالبہ کیا فوری طور پر مہنگائی کے تناسب سے گوشت کے سرکاری نرخ بڑھائے جائیں اور مجسٹریٹس کو چھاپوں اور گرفتاریوں سے روکا جا ئے۔

مزید :

صفحہ آخر -