چین کے ساتھ کشیدگی، بھارت فرانس سے کونسا خوفناک ہتھیار خریدنے جارہاہے؟

چین کے ساتھ کشیدگی، بھارت فرانس سے کونسا خوفناک ہتھیار خریدنے جارہاہے؟
چین کے ساتھ کشیدگی، بھارت فرانس سے کونسا خوفناک ہتھیار خریدنے جارہاہے؟

  

نئی دہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن)چین کے ساتھ کشیدگی کے تناظر نے  جنگی جنون میں مبتلا بھارت کو اسلحہ جمع کرنے کا ایک اور جواز فراہم کردیا۔

بی بی سی اور انڈین میڈیا کے مطابق بھارتی حکومت فرانس سے رفال جنگی جہازوں کے ساتھ اب ہیمر میزائل بھی خریدنے جا رہا ہے۔انڈین نیوز ایجنسی اے این آئی نے سرکاری ذرائع کے حوالے سے کہاہے کہ ’کم نوٹس کے باوجود فرانس ہمارے رفال جنگجو طیاروں کے لیے میزائل سپلائی کرنے کو تیار ہو گیا ہے۔‘

ہیمر میزائل تیار کرنے والی کمپنی سافران الیکٹرنک اینڈ ڈیفینس کے مطابق ’ہیمر میزائل دور سے ہی آسانی سے استمعال کیا جا سکتا ہے۔ فضا سے زمین پر مار کرنے والے اس میزائل کا نشانہ بہت درست بتایا گیا ہے۔‘

کمپنی کا دعویٰ ہے کہ یہ سسٹم آسانی سے فٹ ہو جاتا ہے، گائڈنس کِٹ کے سہارے نشانے لگا سکتا ہے اور کبھی جام نہیں ہوتا۔ میزائل کے آگے لگی گائڈنس کِٹ میں جی پی ایس، انفراریڈ اور لیزر جیسی ٹیکنالوجی فٹ ہوتی ہے۔

ڈھائی سو کلو وزن سے شروع ہونے والا ہیمر میزائل رفال کے علاوہ میراج جنگجو طیاروں میں بھی فٹ ہو سکتا ہے۔ہیمر میزائل کسی بھی علاقے مثال کے طور پر پہاڑی علاقوں تک میں موجود بنکرز کو تباہ کر سکتے ہیں۔

یہ معاہدہ ایک ایسے وقت میں سامنےآیا ہے جب پانچ دن بعد بھارت کو فرانس سے رفال طیارے ملنے والے ہیں۔ 29 جولائی کو انڈین ریاست ہریانہ کے شہر امبالہ میں رفال جنگجو طیاروں کا پہنچنا متوقع ہے۔انڈیا نے فرانس سے 36 جنگجو طیاروں کا معاہدہ تقریباً 60 ہزار کروڑ روپے میں کیا تھا  تاہم ہیمر میزائل کتنے خریدے جارہے ہیں اور ان کی کیا قیمت طے پائی ہے اس حوالے سے ابھی کوئی اطلاعات سامنے نہیں آئی ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -