پیپلزپارٹی اورمسلم لیگ ن کے بعدجماعت اسلامی کابھی چیئرمین نیب کے استعفیٰ کامطالبہ

پیپلزپارٹی اورمسلم لیگ ن کے بعدجماعت اسلامی کابھی چیئرمین نیب کے استعفیٰ ...
پیپلزپارٹی اورمسلم لیگ ن کے بعدجماعت اسلامی کابھی چیئرمین نیب کے استعفیٰ کامطالبہ

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)پیپلزپارٹی اورمسلم لیگ ن کے بعدجماعت اسلامی نے بھی چیئرمین نیب کے استعفیٰ کامطالبہ کردیا۔

امیر جماعت اسلامی سینٹر سراج الحق نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ حکومت نے احتساب کاوعدہ کیاتھا،نیب کابھی احتساب ہونا چاہئے ،نیب نے احتساب کے نام پر صرف سیاسی لوگوں کو نشانہ بنایا،سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعدچیئرمین نیب کو خود مستعفی ہوجانا چاہئے، چیئرمین نیب نے اپنی آنکھیں بند کی ہوئی ہیں۔

جماعت اسلامی نے حکومت کی 2 سالہ کارکردگی کومایوس کن اورناکامیوں کی داستان قراردیدیا،امیر جماعت اسلامی سینٹر سراج الحق نے کہاکہ حکومت کی 2سالہ کارکردگی مایوس کن ہے،حکومت تمام شعبوں میں ناکام ہے،ہماری قوم ہر مہینے کسی نہ کسی بحران اورمشکل میں پھنسی رہی ،حکومت آئی تو ٹماٹر ناپیدہوگیا،عوام نے 300 ،400 روپے کلو خریدا،2 ماہ بعدچینی ناپید ہو گئی ،چینی سکینڈل میں ملوث کئی لوگ پنجاب کابینہ میں ہیں ،انہوں نے کہاکہ پاکستان دنیا میں گنا پیدا کرنے والا ساتواں بڑا ملک ہے ،گندم کی پیدا وارمیں پاکستان پانچواں بڑا ملک ہے لیکن آٹے کا بحران پیدا ہوا،تو20 سے 25 روپے کلو مہنگا ملنے لگا۔

امیر جماعت اسلامی نے کہاکہ کراچی مشکل دورسے گزرہا ہے،صدر کا تعلق کراچی سے ہے لیکن مسائل حل نہیں ہوئے،کراچی میں بڑا مسئلہ بجلی کی لوڈ شیڈنگ کا ہے لیکن کوئی پوچھنے والا نہیں ،انہوں نے کہاکہ کے الیکٹرک کا معاہدہ منسوخ کر کے قومی تحویل میں لیا جائے۔سراج الحق نے کہاکہ عمران خان اپنا وعدہ پورا کریں اور سٹیل مل چلائیں ،ٹڈی دل نے زراعت تباہ کر دیا ،اقدامات نظر نہیں آرہے۔

انہوں ن کہاکہ پانچ اگست کے بعد ریاست مقبوضہ جموں کشمیر نہیں رہی،مقبوضہ جموں کشمیر میں پی ایچ ڈی سکالرز کو شہید کیا گیا،وزیراعظم سے کہتاہوں کشمیر تقریر سے آزاد نہیں ہو گا ،موثر حکمت عملی اپنانا ہو گی،انہوں نے کہاکہ حکومت کلبھوشن کورہا نہیں کرسکتی رہاکرنے والے کو جیل جانا پڑے گا۔

مزید :

قومی -علاقائی -سندھ -کراچی -