پاکستان واپس آنے والے اوورسیز پاکستانیز کو پاکستان میں ملازمتیں دی جائیں گی: زلفی بخاری

پاکستان واپس آنے والے اوورسیز پاکستانیز کو پاکستان میں ملازمتیں دی جائیں گی: ...
پاکستان واپس آنے والے اوورسیز پاکستانیز کو پاکستان میں ملازمتیں دی جائیں گی: زلفی بخاری

  

دبئی (طاہر منیر طاہر) حالیہ کورونا وباءسے قبل اور اس کے دوران دنیا بھر سے تقریباً 55 ہزار اوورسیز پاکستانیوں کے جاب متاثر ہوئے ہیں جن کی اندرون اور بیرون ملک بحالی کے لئے کام ہورہا ہے۔ بیرون ملک جانے والوں کے لئے بیرون ملک جاب فراہم کئے جائیں گے جبکہ واپس آنے والوں کے لیے پاکستان میں ہی روزگار فراہم کیا جائے گا، ان خیالات کا اظہار وزیراعظم پاکستان کے خصوصی مشیر برائے اوورسیز پاکستانیز سید ذوالفقار عباس بخاری (زلفی بخاری) نے قونصلیٹ آف پاکستان دبئی میں ایک پریس کانفرنس کے دوران کیا۔ اس موقع پر ان کے ساتھ سفیر پاکستان برائے متحدہ عرب امارات غلام دستگیر اور قونصل جنرل احمد امجد علی بھی موجود تھے۔

زلفی بخاری نے کہا کہ حکومت پاکستان اوورسیز پاکستانیز کے لیے ہمدردی کا جذبہ رکھتی ہے اور ان کی فلاح و بہبود کے لیے مثالی کام کرنا چاہتی ہے۔ زلفی بخاری نے کہا کہ اوورسیز بینک کا قیام بھی عمل میں لای اجارہا ہے جبکہ اوورسیز پاکستانیز کے لیے پنشن سکیم بھی متعارف کروائی جارہی ہے۔ زلفی بخاری نے کہا اوورسیز پاکستانیز ہر سال 23 بلین ڈالر بطور زرمبادلہ پاکستان بھجواتے ہیں اس لیے بھی یہ ہمارے لئے اہمیت کے حامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حالیہ وباءکے دنوں میں حکومت پاکستان نے کورونا کا ڈٹ کر مقابلہ کیا ہے اور اسے پھیلنے سے روکا ہے جس کا اعتراف دیگر ممالک نے بھی کیا ہے ۔ کورونا وباءکو قابو کرنے میں پاکستان کا شمار اولین ممالک میں ہوتاہے۔

زلفی بخاری نے کہا کہ وباءکے دوران امارات میں پھنسے پاکستانیوں کو ملک واپس بھجوانے اور حد درجہ تعاون کرنے پر میں حکومت پاکستان کی طرف سے حکومت امارات کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت امارات نے ہمیشہ مشکل وقت میں پاکستان کی مدد کی ہے جس پر ہم ان کے شکرگزار ہیں۔ اپنے تین روزہ دورہ کے دوران زلفی بخاری نے امارات کے وزیر افرادی قوت نصیر بن ثانی سے بھی ملاقات کی اور بے روزگار ہونے والے پاکستانیوں کے دوبارہ حصول روزگار کے لیے بات کی جس پر وزیر موصوف نے ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کروائی۔

پریس کانفرنس کے دوران زلفی بخاری نے بتایا کہ 154 خصوصی پروازوں کے ذریعے ہزاروں مسافروں کو پاکستان پہنچایا گیا جبکہ 1276 افراد کے لیے مفت ٹکٹ فراہم کرنے پر انہوں نے سفارتخانہ اور قونصلیٹ کے کردار کی تعریف کی۔ ایک سوال کے جواب میں زلفی بخاری نے کہا کہ الیکٹرک کاریں ملک لیجانے والوں کی حوصلہ افزائی کی جائے گی جبکہ کنسٹرکشن مشینری کو بھی کم از کم ٹیکس کے ساتھ ملک لیجانے کے لیے بھی اقدامات کیے جائیں گے۔

مزید :

عرب دنیا -تارکین پاکستان -