موٹے لوگ کورونا وائرس کا شکار ہوجائیں تو موت کا خطرہ کتنا زیادہ ہوتا ہے؟ تازہ تحقیق میں سائنسدانوں نے پریشان کن انکشاف کردیا

موٹے لوگ کورونا وائرس کا شکار ہوجائیں تو موت کا خطرہ کتنا زیادہ ہوتا ہے؟ تازہ ...
موٹے لوگ کورونا وائرس کا شکار ہوجائیں تو موت کا خطرہ کتنا زیادہ ہوتا ہے؟ تازہ تحقیق میں سائنسدانوں نے پریشان کن انکشاف کردیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا وائرس پھیلنے کے بعد سے سائنسدان اس وباءکے متعلق موٹاپے کے شکار افراد کو متنبہ کرتے آ رہے ہیں کہ موٹاپے کے شکار افراد کی اس وائرس سے موت ہونے کا خطرہ زیادہ ہوتا ہے۔ اب کورونا وائرس کے مریضوں کے متعلق برطانوی اعدادوشمار میں اس حوالے سے ایسا انکشاف سامنے آ گیا ہے کہ فربہ لوگ سن کر ہی پریشان ہو جائیں گے۔ میل آن لائن کے مطابق برطانیہ میں کورونا وائرس کے متاثرہ اوراموات کے اعدادوشمار کے تجزئیے میں ثابت ہوا ہے کہ جو لوگ موٹاپے کا شکار ہوں ان کی کورونا وائرس سے موت ہونے کا خطرہ 40فیصد زیادہ ہوتا ہے۔برطانوی ہسپتالوں میں جو لوگ کورونا وائرس کی وجہ سے انتہائی نگہداشت وارڈز میں پہنچے ان میں اکثریت موٹاپے کے شکار لوگوں کی تھی۔

 نیشنل ہیلتھ سروسز کے ماہرین کی طرف سے بتایا گیا ہے کہ جتنے لوگوں کی حالت تشویشناک ہوئی اور انہیں انتہائی نگہداشت وارڈز میں رکھنا پڑا ان میں حیران کن طور پر تین چوتھائی لوگ موٹاپے کا شکار تھے اور ان میں موت کی شرح بھی دوسروں کی نسبت 40فیصد زیادہ تھی۔سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ ”اگرچہ تاحال اس کی وجہ معلوم نہیں کہ موٹاپے کے شکار افراد کی کورونا وائرس سے حالت کیوں زیادہ تشویشناک ہوتی ہے اور ان کی موت کا امکان کیوں زیادہ ہوتا ہے تاہم اس کی ایک ممکنہ وجہ یہ ہو سکتی ہے کہ موٹاپا ان کے مدافعتی نظام کو متاثر کرتا ہے اوراس کے لیے وائرس سے لڑنا مزیدمشکل کر دیتا ہے۔

مزید :

تعلیم و صحت -کورونا وائرس -