نور مقدم قتل کیس، ملزم ظاہر جعفر کے والدین کا دو روزہ جسمانی ریمانڈ منظور

نور مقدم قتل کیس، ملزم ظاہر جعفر کے والدین کا دو روزہ جسمانی ریمانڈ منظور
نور مقدم قتل کیس، ملزم ظاہر جعفر کے والدین کا دو روزہ جسمانی ریمانڈ منظور

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن ) عدالت نے سابق سفیر کی بیٹی نور مقدم کے قتل کیس میں ملوث ملزم ظاہر جعفر کے والدین اور ملازمین کا دوروزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرلیا۔

نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق وفاقی پولیس نے اسلام آباد کی مقامی عدالت میں نور مقدم کے قتل میں ملوث ملز م ظاہر جعفر کے والدین اور دو ملازمین کو پیش کیا ۔ وفاقی پولیس کی جانب سے ملزمان کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی گئی۔

عدالت نے استدعا منظور کرتے ہوئے ملزم ظاہر جعفر کے والدین اور ملازموں کو دو روزہ ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیا۔

واضح رہے کہ ڈپٹی کمشنر اسلام آباد حمزہ شفقات نے اپنے ایک پیغام میں بتایا تھا کہ تھراپی ورکس نامی ادارے جس سے ملزم وابستہ رہے اسے سیل کرنے کے آرڈرز جاری کردیئے گئے ہیں جبکہ ملزم ظاہر جعفر کے والدین کو بھی گرفتا ر کر لیا گیا ہے۔

 ترجمان اسلام آباد پولیس کا کہنا تھا کہ ملزم کے والد ذاکر جعفر، والدہ عصمت آدم جی، ملازمین افتخار اور جمیل سمیت متعدد افراد کو شواہد چھپانے اور جرم میں اعانت کے الزامات میں گرفتار کیا گیا ہے۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -علاقائی -اسلام آباد -