فردوس شمیم نقوی نے وزیراعلیٰ مراد علی شاہ پر چڑھائی کردی ، سندھ حکومت پر کرپشن کے سنگین الزامات

فردوس شمیم نقوی نے وزیراعلیٰ مراد علی شاہ پر چڑھائی کردی ، سندھ حکومت پر ...
فردوس شمیم نقوی نے وزیراعلیٰ مراد علی شاہ پر چڑھائی کردی ، سندھ حکومت پر کرپشن کے سنگین الزامات

  

 کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) تحریک انصاف کے رہنما فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ وزیر اعلی سندھ سید مراد علی شاہ تین سال میں اپنی جے آئی ٹی کا جواب نہیں دے سکے،سندھ حکومت نے اومنی گروپ کو اربوں روپے دیے ہیں، سندھ کے ہر محکمہ میں فراڈ کا بازار گرم ہے،وزیراعلی سندھ جواب تو دو۔

 سندھ اسمبلی میں تحریک انصاف کے پارلیمانی لیڈربلال غفارکے ہمرہ اپنی رہائشگاہ پرپریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ رواں سال پوری تنخواہیں اور پینشن کی رقم ترقیاتی بجٹ سے دی جارہی ہیں، سندھ کا غیر ترقیاتی بجٹ اس وقت 46 فیصد ہے۔

فردوس شمیم نقوی نے کہا کہ سندھ حکومت نے اومنی گروپ کو اربوں روپے دیے ہیں، سندھ کے ہر محکمہ میں فراڈ کا بازار گرم ہے، جواب تو دو،سندھ فنانس ڈیپارٹمنٹ کی آڈٹ رپورٹ میں پینشنرکا ذکر نہیں ہے، جتنے افسران نے پلی بارگین کی ان کے نام شائع کیے جائیں۔

انہوں نے کہا کہ نیب مشرف کے دور میں بنی، اسکے قوانین میں ترمیم کی جائے،ہم کوشش کرتے رہیں گے کہ سندھ کی عوام کو پیپلزپارٹی کے طرز حکمرانی سے آگاہ کرتے رہیں،حیدرآباد  اوردادو میں اربوں روپے کے فراڈ کیے گئے ،جتنے افسران نے پلی بار گین کی ہے ان سب کے نام شائع کیے جائیں ،یہ ٹوپی ہماری تاریخ اور کلچر کا حصہ ہے۔

فردوس شمیم نقوی نے کہاکہ کرپشن پکڑے کا کوئی سسٹم ہی موجود نہیں ہے،ہمیں خطرہ ہے جس قسم کی چوری چکاری ہورہی ہے سندھ دیوالیہ ہوجائے گا ، ہم کسی پر الزام نہیں لگاتے لیکن اپنے کرتوتو ں پر تو جواب دو ،وزیر اعلی سندھ نے ابھی تک جواب نہیں دیا ،سندھ میں ٹراما سینٹر کیوں نہیں بنے ؟وزیراعلی سندھ جواب نہیں دے رہے ہیں۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -