طاہر القادری کے خلافدہشتگردی کا مقدمہ درج کیا جائے،محمد علی میاں

طاہر القادری کے خلافدہشتگردی کا مقدمہ درج کیا جائے،محمد علی میاں

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(کامرس رپورٹر) پولیس اہلکاروں پر تشدد کرنے پر طاہر القادری کے خلاف دہشت گردی کا مقدمہ درج کیا جائے طاہر القاری کی ڈرامہ بازیوں کے باعث ایک دن میں ملکی معیشت کو اربو ں کا دھچکا لگا ہے ملک سلامتی کی اہم جنگ لڑی جا رہی ہے جبکہ قادری صاحب اپنے مٹھی بھر پیروکاروں کے ہمراہ ملک میں انتشار پھیلاکر دہشت گردوں کی مدد کر ہے ہیں ان خیالات کا اظہار مسلم لیگ (ن) ٹریڈرز ونگ کے صدر محمد علی میاں، سینئر نائب صدر خواجہ خاور رشیداور جنرل سیکرٹری زبیر احمد نے ٹریڈرز ونگ پنجاب کے اجلاس میں کیا ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ روز طاہر القادری کے مریدوں نے وفاقی دارالحکومت میںقانون کو اپنے ہاتھ میں لیتے ہوئے شدید دہشت گردی کی ہے جس کا مقدمہ ان کے خلاف درج کیا جانا چاہئے 100سے زائد پولیس اہلکاروں کوان کے شرپسندکارکنان نے تشدد کا نشانہ بنایا جس سے قانون کی حکمرانی کے تصور کو چوٹ پہنچی ہے قانون نا فذ کرنے والے اداروں کو اس طر ح کے شر پسندوں کو کنٹرول کر نے کیلئے ٹھوس اقدامات کر نے چاہئیں انہوں نے کہا کہ قادری صاحب نے عملاََ غیر ملکی کمپنی کے طیارے کو ہائی جیک کیے رکھا ہے طالبان نے کراچی ائیر پورٹ پر حملہ کر کے ملکی سالمیت کو نقصان پہنچایا تھا جبکہ قادری صاحب نے اسلام آباد اور لا ہور ائیر پورٹس پر انتشار پھیلایا اور ملکی امیج کو خراب کیاجس کے بعد طالبان اور طاہر القادری میں فرق ختم ہو گیا ہے انہوں نے مطالبہ کیا کہ گزشتہ روز ملکی معیشت کو پہنچنے والے نقصان کی تلافی کیلئے قادری صاحب کے خلاف زرِ تلافی کا مقدمہ درج کیا جائے گزشتہ روز اسلام آباد اور لا ہو ر ائیر پورٹس کی بندش کے باعث نا صر ف مسافروں کو مشکلات کا سامنا کر نا پڑا بلکہ بر آمدات بھی نہیں ہو سکیں۔
جبکہ راولپنڈی اور اسلام آباد میں کھانے پینے کی اشیاءبھی منڈیو ں میں نہیں پہنچائی جا سکیں جس کے باعث شہریو ں کو مہنگے داموں اشیاءخریدنی پڑیں۔ طاہر القادری مسترد شدہ سیاستدانوں کے ساتھ مل کر ملک میں انتشارپھیلا کر ترقی کرتی معیشت کو ٹریک سے اتا رنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے اس مو قع پر حکومت اور پولیس کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ انہوں نے جس طرح تحمل سے اس مسئلے کو سلجھایاواقعی وہ سراہے جانے کے قابل ہے۔