دوسرے روز محدودپیمانے پرتیزی ‘29ہزارپوائنٹس کی حدبحال

دوسرے روز محدودپیمانے پرتیزی ‘29ہزارپوائنٹس کی حدبحال

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


کراچی(اکنامک رپورٹر)کراچی اسٹاک ایکسچینج میں تیزی کا تسلسل جاری کاروباری ہفتے کے دوسرے روز منگل کو محدودپیمانے پرتیزی رہی اور کے ایس ای 100 انڈیکس کی 29ہزار کی نفسیاتی حدبحال ہوگئی۔سرمایہ کاری مالیت میں 8 ارب 73 روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا ۔ تفصیلات کے مطابق کاروباری ہفتہ کے دوسرے روز منگل کو کراچی اسٹاک ایکسچینج میں حصص کی خرید و فروخت میں تیزی کا رجحان رہا اور کے ایس ای 100 انڈیکس 58.41 پوائنٹس کے اضافہ سے 29057.44 پوائنٹس پر بند ہوا جبکہ کے ایس ای 30 انڈیکس بھی 61.35 پوائنٹس کی تیزی سے 19993.63 پوائنٹس پر بند ہوا۔ مزیدبرآں کے ایس سی آل شیئر انڈیکس میں 24.68 پوائنٹس کا اضافہ رونماءہوا جبکہ کے ایم آئی 30 انڈیکس میں بھی 34.28 پوائنٹس کی تیزی ریکارڈ کی گئی۔ بینکس ٹریڈ ایبل (بی اے ٹی آئی) انڈیکس 170.97 پوائنٹس کے اضافہ سے 17422.70 پوائنٹس پر بند ہوا تاہم آئل اینڈ گیس ٹریڈ ایبل (او جی ٹی آئی) انڈیکس 66.63 پوائنٹس کی کمی سے 21451.32 پوائنٹس پر بند ہوا۔ مارکیٹ میں مجموعی طور پر 352 کمپنیوں کے حصص کا لین دین ہوا جن میں سے 177 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں تیزی، 155 کمپنیوں کے حصص کے بھاﺅ میں مندی اور 20 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔ سب سے زیادہ تیزی رفحان میز کے حصص کی قیمتوں میں ہوئی جس کے حصص کی قیمت 200 روپے کے اضافہ سے 10999 روپے پر بند ہوئی۔

اسی طرح شیزان انٹرنیشنل کے حصص کی سودے بھی 41.80 روپے کی تیزی سے 896.80 روپے پر بند ہوئے۔ سب سے زیادہ مندی ویتھ پاک لمیٹڈ اور نیسلے پاکستان کے حصص کی قیمتوں میں ہوئی۔ ویتھ پاک لمیٹڈ کے حصص کی قیمت 225 روپے کی مندی سے 4275.01 روپے اور نیسلے پاکستان کے حصص کی قیمت بھی 200 روپے کی کمی سے 7800 روپے رہ گئی۔ سب سے زیادہ کاروبار فوجی سیمنٹ کے حصص میں ہوا جو 1 کروڑ 46 لاکھ 90 ہزار 500 شیئرز رہا جس کی قیمت 19.84 روپے سے شروع ہو کر 19.42 روپے پر بند ہوئی۔ مجموعی طور پر 16 کروڑ 59 لاکھ 89 ہزار 960 حصص کا کاروبار ہوا جس کا تجارتی حجم 8 ارب 73 کروڑ 48 لاکھ 59 ہزار 953 روپے رہا۔ مارکیٹ کیپیٹل 68 کھرب 46 ارب 63 کروڑ 37 لاکھ 57 ہزار 222 روپے سے بڑھ کر 68 کھرب 54 ارب 32 کروڑ 45 لاکھ 47 ہزار 814 روپے ہو گیا۔ فیوچر ٹریڈنگ میں 146 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں تیزی، 29 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں مندی اور 4 کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا جبکہ 3 کروڑ 51 لاکھ 23 ہزار 263 حصص کا کاروبار ہوا۔

مزید :

کامرس -