حکومت سندھ شجرکاری مہم کیلئے فنڈز جاری کرے،سپریم کورٹ

حکومت سندھ شجرکاری مہم کیلئے فنڈز جاری کرے،سپریم کورٹ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 
کراچی(اسٹاف رپورٹر) سپریم کورٹ آف پاکستان نے حیدرآباد میں1446 ایکڑ اراضی پر شجر کاری مہم کے لیے سندھ حکومت کو فنڈز جاری کرنے کی ہدایت کردی ۔محکمہ جنگلات کی زمین پر دوبارہ قبضہ کے خلاف دائر درخواست پر چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس تصدق حسین جیلانی کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے سماعت کی۔ سماعت کے دوران ڈپٹی کمشنر حیدرآباد نواز سہو نے عدالت کو بتایا کہ 4مئی 2013 کو سپریم کورٹ کے حکم پر محکمہ جنگلات کی 1446 ایکڑ اراضی پر قبضہ ختم کراکے زمین محکمہ جنگلات کے حوالے کردی گئی تھی۔ ڈپٹی کمشنر کے بیان کے بعد کنزرویٹو ڈپارٹمنٹ کے محمد صادق مغل نے بتایا کہ زمین محکمہ جنگلات کے حوالے کردی گئی ہے۔ شجر کاری مہم کے لیے 2013 میں حکومت نے فنڈز جاری نہیں کیے جبکہ زمین پرد وبارہ قبضہ روکنے کے لیے حیدرآباد پولیس کو خطوط لکھے کہ یہاں پر پولیس چوکی قائم کی جائے لیکن تاحال نہ تو فنڈز جاری ہوئے اور نہ ہی پولیس چوکی قائم کی گئی۔ جبکہ محکمہ کے پاس اتنی استعداد نہیں کہ قبضہ کو روکا جاسکے ،جس پر چیف جسٹس سپریم کورٹ نے درخواست نمٹاتے ہوئے ایڈوکیٹ جنرل سندھ کو حکم دیا کہ وزیر اعلیٰ سندھ سے مشاورت کرکے محکمہ جنگلات کو فنڈز جاری کیے جائیں جبکہ زمین پر دوبارہ قبضہ روکنے کے لیے علاقے میں پولیس چوکی کے قیام کو حکم بھی دے دیا ۔

مزید :

صفحہ آخر -