سعودی شہریوں میں غیر ملکیوں سے شادیوں کا رجحان بڑھنے لگا

سعودی شہریوں میں غیر ملکیوں سے شادیوں کا رجحان بڑھنے لگا
سعودی شہریوں میں غیر ملکیوں سے شادیوں کا رجحان بڑھنے لگا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک ) سعودی مردوں اور خواتین میں غیر ملکیوں سے شادی کے رجحان 2013ءمیں روز افزوں رہا۔غیر ملکی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق 2013ءمیں غیر ملکیوں سے سعودیوں کی شادیوں کی مجموعی تعداد تقریبا ساڑھے چار ہزار رہی اور شادیوں کی کامیابی کی شرح 75 سے 90 فیصد رہا جبکہ اسی عرصے کے دوران سعودی شہریوں سے غیر ملکی خواتین کی 2488 شادیوں میں سے ایک چوتھائی طلاق سے دوچار ہو گئیں،اس کے مقابلے میں سعودی خواتین کی غیر ملکی مردوں سے ہونے والی شادیوں میں ناکامی کی شرح صرف دس فیصد رہی ہے۔سعودی شہریوں نے جن غیر ملکی خواتین کو شادی کے لیے پسند کیا ان میں شامی خواتین کی تعداد سب سے زیادہ رہی، دوسرے نمبر پر مراکشی اور تیسرے نمبر پر فلسطینی خواتین رہیں،ایک سال میں سعودی شوہروں سے طلاق پانے والی خواتین کی مجموعی تعداد 612 رہی۔سعودی خواتین کا شادی کے حوالے سے جن مردوں کی طرف رجحان رہا، ان میں سب سے زیادہ تعداد یمنی شہریوں کی ہے۔ دوسرے نمبر پر شامی اور تیسرے نمبر پر قطری شہری سعودی خواتین کے شوہر بنے۔