دل کے آپریشن کے دوران بچے کی پیدائش

دل کے آپریشن کے دوران بچے کی پیدائش
دل کے آپریشن کے دوران بچے کی پیدائش

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

نیویارک(نیوزڈیسک) قدرت جب کسی کو اپنی رحمت کے سائے سے نواز دے تو بڑی سے بڑی آفت بھی کچھ نہیں بگاڑ سکتی ۔ایک امریکی خاتون اس کی زندہ مثال ہے ۔پینتیس سالہ ادتا ٹریسی کی بچی کی پیدائش کے ساتھ ہی دل کا خطرناک آپریشن بھی کرنا پڑ گیا اور بظاہر نا ممکن کام انتہائی کامیابی سے بخیروعافیت مکمل ہو گیا۔
نو ماہ کی حاملہ ادتا اپنے کام میں مصروف تھی کہ اسے شدید کمر درد شروع ہو گیا اور جب یہ درد چھاتی کی طرف بڑھنا شروع ہوا تو اس نے ایمرجنسی سروس 911کو فون کر دیا جب اسے ہسپتال پہنچایا گیا تو ڈاکٹروں نے سی ٹی سکین سے معلوم کیا کہ خاتون کے دل سے باقی جسم کو خون پہنچانے والی بڑی نالی اے اورٹا میں ایک فٹ لمبا گھاﺅ بن چکا تھا جس سے خون رس کر دل کے گرد جمع ہورہا تھا اور یہ انتہائی خطرناک صورتحال تھی ۔ آپریشن فوری شروع کرنے کی ضرورت تھی اور مسئلہ یہ تھا کہ آپریشن کے لئے بے ہوشی کی دوا کی ضرورت تھی جوکہ پیدا ہونے والی بچی کے لئے جان لیوا ثابت ہو سکتی تھی لہذا ڈاکٹروں کی دو ٹیموں نے ناقابل یقین تیزی کے ساتھ خاتون کو اور اس کی بچی کو بچانے کی کوششیں شروع کر دیں۔ محض آدھے منٹ میں سی سیکشن آپریشن کر کے بچی کو بحفاظت ماں کے پیٹ سے نکال لیا گیا اور پھر دوسری ٹیم نے 9گھنٹے تک ایک انتہائی مشکل اور پیچیدہ آپریشن جاری رکھا ،بلاآخر یہ آپریشن بھی کامیابی سے مکمل ہو گیا ۔اب ادتا اپنی ننھی بیٹی اربیلا کے ساتھ انتہائی خوش ہے اور تیزی سے صحتیاب ہو رہی ہے۔اس کا کہنا ہے کہ قدرت نے ننھی اربیلاکی وجہ سے اسے نئی زندگی دے دی ورنہ ایسی خطرناک صورتحال میں اس کا بچنا بظاہر ممکن نا تھا۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -