ملزم پہلے ہی پنشن کے 4 کروڑ12 لاکھ لے چکا ہے،کیوں نہ ملزم کی سزا بڑھا دیں،چیف جسٹس پاکستان ،فنڈز میں خوربردکے مجرم کی پنشن ادائیگی سے متعلق درخواست خارج

ملزم پہلے ہی پنشن کے 4 کروڑ12 لاکھ لے چکا ہے،کیوں نہ ملزم کی سزا بڑھا دیں،چیف ...
ملزم پہلے ہی پنشن کے 4 کروڑ12 لاکھ لے چکا ہے،کیوں نہ ملزم کی سزا بڑھا دیں،چیف جسٹس پاکستان ،فنڈز میں خوربردکے مجرم کی پنشن ادائیگی سے متعلق درخواست خارج

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ آف پاکستان نے پنشن فنڈزمیں خوردبرد کے مجرم احمد خان کی پنشن ادائیگی سے متعلق درخواست واپس لینے پر خارج کردی،چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ پہلے ہی پنشن کے 4 کروڑ 12 لاکھ لے چکا ہے،اتنی بڑی کرپشن کے لیے اسے سزا کم نہیں دی گئی؟ کیوں نہ ملزم کی سزا بڑھا دیں، یہ بہت بڑا فراڈ ہے، یہ صرف یہاں نہیں ہو رہا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں پنشن فنڈزمیں خوردبرد کے مجرم احمد خان کی پنشن ادائیگی سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی، چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں بنچ نے کیس کی سماعت کی،وکیل ملزم نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ کیس کو 19سال ہوچکے ہیں ،میرا موکل سزا بھی پوری کرچکا ہے،ملزم سینئر آڈیٹر پنشن کے عہدے پر تھا،اس کے پاس جو پنشن کلیم آتے تھے یہ ان کا حساب کرتا تھا،سینئر آڈیٹر سینئر کلرک ہی ہوتا ہے۔

چیف جسٹس پاکستا ن نے کہا کہ کچھ لوگوں نے تو کہا کہ یہ خود بھی پنشن دیتا تھا،یہ تو پورا ایک گروپ تھا جس کا یہ حصہ تھا،یہ 4 کروڑ کا گھپلا تھا،ملزم پنشن میں ہی گھپلا کرکے اب پنشن مانگ رہا ہے،چیف جسٹس پاکستان نے کہاکہ اس کیس میں تو کہا گیا تھا کہ یہ سینئر کلرک تھا،آپ نے جو سرکاری گواہ پیش کیا تھا اس نے بھی آپ کےخلاف گواہی دی، اس کیس میں 3 اور ملزمان تھے انہوں نے اپیل نہیں کی،اسکا مطلب انہوں نے جرم قبول کیا،گواہ آپ نے بلایا، اس نے آپ کے خلاف ہی گواہی دے دی، چیف جسٹس نے کہا کہ اس کیس میں کہا گیا کہ پنشن بک بھی اس نے دی، یہ تو اس کا کام نہیں تھا، گھر کو آگ لگ گئی گھر کے چراغ سے، ملزم پنشن سے پہلے ہی پنشن کے 4 کروڑ 12 لاکھ لے چکا ہے،اتنی بڑی کرپشن کیلئے اسے سزا کم نہیں دی گئی؟ کیوں نہ ملزم کی سزا بڑھا دیں، یہ بہت بڑا فراڈ ہے، یہ صرف یہاں نہیں ہو رہا،عدالت نے ملزم احمد خان کی پنشن ادائیگی سے متعلق درخواست واپس لینے پرخارج کردی۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد