ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی میں کسی لفظ کے استعمال پر پابندی نہیں لگا سکتے ، تجزیہ کار مظہر عباس نے واضح کردیا

ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی میں کسی لفظ کے استعمال پر پابندی نہیں لگا سکتے ، تجزیہ ...
ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی میں کسی لفظ کے استعمال پر پابندی نہیں لگا سکتے ، تجزیہ کار مظہر عباس نے واضح کردیا

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) تجزیہ کار مظہر عباس نے کہاہے کہ قومی اسمبلی میں ڈپٹی سپیکر نے سلیکٹڈ کالفظ حذف نہیں کیا بلکہ اس پر پابندی لگائی ہے جووہ نہیں کر سکتے۔

جیونیوز کے پروگرام ”رپورٹ کارڈ“میں گفتگوکرتے ہوئے مظہر عباس نے کہا کہ ستر سال سے پاکستان میں نظام ہی سلیکٹڈ رہاہے ، 1947کے بعد سے چلتے جائیں تو آپ کوپتہ چل جائے گا کہ کیسے سلیکشن ہوتی رہی ہے؟ ان کا کہناتھا کہ قومی اسمبلی میں ڈپٹی سپیکر نے سلیکٹڈ کالفظ حذف نہیں کیا بلکہ اس پر پابندی لگائی ہے جووہ نہیں کر سکتے ۔ ڈپٹی سپیکرالفاظ حذف کرسکتے ہیں ، ا ن پر پابندی نہیں لگا سکتے ۔

واضح رہے کہ قومی اسمبلی میں وزیر اعظم عمران خان کو اپوزیشن کی جانب سے اکثر سلیکٹڈ وزیراعظم کہہ کر پکارا جاتا تھاجس پر ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی نے ایوان میں سلیکٹڈ کا لفظ استعمال کرنے پر پابندی لگا دی ہے ۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد