ڈیرہ،جیل کی بجلی کاٹنے پر قیدی سراپا احتجاج

ڈیرہ،جیل کی بجلی کاٹنے پر قیدی سراپا احتجاج

  

ڈیرہ اسماعیل خان(بیورورپورٹ)پیسکو واپڈا کی جانب سے پشاور ہائیکورٹ پشاور کے رات کے اوقات میں جیلوں میں لوڈ شیڈنگ نہ کرنے کے احکامات کی خلاف ورزی کرتے ہوئے ڈسٹرکٹ سنٹرل جیل ڈیرہ اسماعیل خان میں رات کے مختلف اوقات میں بجلی کاٹنے پر جیل کے قیدی بیرکوں میں سراپا احتجاج، واپڈا اور انتظامیہ کیخلاف نعرے بازی، سپرنٹنڈنٹ جیل بنیامین خان میانخیل کی یقین پر احتجاج ختم کردیا، سپرنٹنڈنٹ جیل کا پیسکو کے ذمہ داران، ضلعی انتظامیہ اور پشاور ہائیکورٹ پشاور کے رجسٹرار کو مسئلہ کے حل کیلئے تحریری مراسلہ ارسال۔ تفصیلات کے مطابق پشاور ہائیکورٹ پشاور کی جانب سے واپڈا حکام کو احکامات جاری کئے گئے تھے کہ سورج ڈوبنے سے سورج کے طلوع ہونے تک رات کے اوقات میں صوبے بھر کی جیلوں میں سیکورٹی خدشات اور مخدوش حالات کے پیش نظر بجلی کی لوڈ شیڈنگ نہ کی جائے، تاہم ڈیرہ اسماعیل خان میں واقع صوبے کی حساس ترین ڈسٹرکٹ سنٹرل جیل ڈیرہ میں واپڈا حکام کی جانب سے اعلی عدلیہ کے احکامات کی خلاف ورزی کرتے ہوئے رات کے مختلف اوقات میں رات12سے 1بجے، رات2سے3بجے اور علی الصبح 4بجے سے5 بجے صبح تک بجلی کی بندش پر شدید گرمی سے بے حال قیدیوں نے جیل کی بارکوں میں واپڈا اور انتظامیہ کیخلاف شدید احتجاج اور نعرے بازی کی۔ قیدیوں کے احتجاج کی اطلاع پر سپرنٹنڈنٹ جیل بنیامین خان میانخیل فوری طور پر موقع پر پہنچے اور قیدیوں سے مذاکرات کرکے انہیں مسئلہ کے فوری حل کی یقین دہانی کرائی جس پر قیدیوں نے احتجاج ختم کردیا۔ اس حوالے سے سپرنٹنڈنٹ ڈسٹرکٹ سنٹرل جیل بنیا مین خان میانخیل نے واپڈا پیسکو کے مقامی اور صوبائی ذمہ داران، ڈپٹی کمشنر ڈیرہ سمیت پشاور ہائیکورٹ پشاور کے رجسٹرار کو بجلی کی بندش اور شدید گرمی کے باعث قیدیوں کے مسائل اور سیکورٹی خدشات کے حوالے مذکورہ حکام کو مسئلہ کے حل کیلئے تحریری مراسلہ ارسال کردیا ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -