قرنطینہ کئے گئے سیکڑوں مریضوں کی حالت مزید خراب، شہریوں کا احتجاج

قرنطینہ کئے گئے سیکڑوں مریضوں کی حالت مزید خراب، شہریوں کا احتجاج
قرنطینہ کئے گئے سیکڑوں مریضوں کی حالت مزید خراب، شہریوں کا احتجاج

  

کراچی ( ویب ڈیسک) کراچی میں غیراعلانیہ بدترین لوڈشیڈنگ کا سلسلہ رک نہ سکا۔ گھروں میں قرنطینہ کیے گئے کورونا کے سیکڑوںمریضوں کی حالت مزید خراب ہونے لگی۔ کے الیکٹرک نے بدھ کوبعض علاقوں میں چوبیس گھنٹے میں مجموعی طور پر آٹھ سے دس گھنٹے تک بجلی بند کی۔

گزشتہ ایک ہفتے سے شدید گرمی میں با ر بار کی لوڈ شیڈنگ سے لوگ تنگ آچکے ہیں اور انہوں نے سڑکوں پر آ کراحتجاج کرنا شروع کر دیا ہے ان کا کہنا ہے وفاقی، صوبائی حکومت یا دیگر مقتدر اور با اختیار اداروں کی جانب سے نوٹس نہ لیا جانا افسوسناک ہے انہوں نے اپیل کی کہ کے الیکٹرک انتظامیہ عوام پر رحم کرے کے الیکٹرک کی جانب سے اب تک لوڈ شیڈنگ کے باقاعدہ شیڈول اور اوقات سے صارفین کو مطلع نہیں کیا گیا ہے جس سے صورتحال مزید خراب ہو گئی ہے۔

بجلی کی طویل بندش کی وجہ سے ا سمارٹ لاک ڈاﺅن والے علاقوں کے مکین دہری اذیت میں مبتلا ہو گئے ہیں ایک طرف لاک ڈاون میں عوام کو گھروں میں رہنے کاپابندکیاگیاہے تو دوسری جانب گھنٹوں غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ کر کے شہریوں کو گھروں سے باہر نکلنے پر مجبور کر رہی ہے دن اور رات کو بجلی کے باربار تعطل سے لوگوں کے معمولات زندگی بری طرح متا ثرہو رہے ہیں دفاتر کے کام بھی مشکلات ہیں صارفین نے کے الیکٹرک کے اس موقف کو بہانہ قرار دیا کہ فرنس آئل اور گیس کی کمی کے باعث پیداوار کم ہو رہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ کے الیکٹرک جسے پہلے سے معلوم ہوتا ہے کہ گر میوں میں کتنی ڈیمانڈ ہو گی کءسال گزرنے کے بعد بھی کراچی کی ڈیمانڈ کے مطابق بجلی نہ بنا سکی بدھ کو صدر،کھارادر،کیماڑی ،سلطان آباد، لیاری، محمودآباد، لانڈھی کورنگی،گلشن اقبال ،فیڈرل بی ایریا،ناظم آباد، نار ظم آباد،لیاقت آباد سمیت شہر کے تمام علاقوں میں لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری رہا۔

بلدیہ ٹاﺅن کے عوام نے کہا کہ سعیدآباد ،گلشن غازی ،اتحاد ٹاﺅن ،جدہ ہزارہ کالونی،سوات کالونی، قائم خانی کالونی، رشیدآباد، عابد آباد،نئی آبادی،نیول کالونی سمیت بلدیہ ٹاﺅن کے تمام علاقوں میںشدید گرمی میں بدترین لوڈ شیڈنگ نے عوام کا جینا دوبھر کردیا اورپانی کا بحران بھی سنگین شکل اختیار کرگیا ہے جس کی وجہ سے سخت گرمی میں شہریوں کا براحال ہے جبکہ لوڈ شیڈنگ اور گرمی کی وجہ سے اسمارٹ لاک ڈاﺅن والے علاقوں میں گھروں قرنطینہ کیے گئے کرونا کے سینکڑوںمریضوں کی حالت بھی مزید خراب ہونے لگی ہیں۔

شدید گرمی ،کرونا کی وبا کے با وجود شہر بھر بجلی کی طویل بندش کے باعث شہریوں کے صبر کا پیمانہ لبریز ہوگیا۔کے الیکٹرک کے ستائےشہری سڑکوں پر نکل آئے طویل لوڈشیڈنگ کے خلاف شاہراہ قائدین پر شہریوں کا احتجاج کے الیکٹرک کی ہٹ دھرمی پر عوام پریشان،وفاقی و صوبائی حکومتیں خاموش احتجاج کے باعث ٹریفک کی آمد و رفت معطل ہو گئی ،جبکہ کے الیکٹرک کے دفتر میں گھسنے کی کوشش مختلف علاقوں میں رات گئے بھی بجلی کی غیراعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری رہا۔سلطان آباد اور پی ای سی ایچ ایس کے علاقہ مکین روڈوں پر نکل کر احتجاج کیا ، جبکہ گلستانِ جوہر میں کے الیکٹرک اہلکاروں کو اسٹریٹ لائٹس کے بٹن کاٹتے ہوئے پکڑ لیا گیا۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -