لوگوں کوبڑی امیدتھی اس لیے تبدیلی لائے لیکن سیاسی لوگ ایک دوسرے پرکیچڑاچھالنے آگئے ،سپریم کورٹ

لوگوں کوبڑی امیدتھی اس لیے تبدیلی لائے لیکن سیاسی لوگ ایک دوسرے ...
لوگوں کوبڑی امیدتھی اس لیے تبدیلی لائے لیکن سیاسی لوگ ایک دوسرے پرکیچڑاچھالنے آگئے ،سپریم کورٹ

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)کورونا ازخودنوٹس کیس میں سپریم کورٹ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ لوگوں کوبڑی امیدتھی اس لیے تبدیلی لائے لیکن سیاسی لوگ ایک دوسرے پرکیچڑاچھالنے آگئے ہیں،پوری حکومت کو 20 لوگ یرغمال نہیں بناسکتے۔

سپریم کورٹ میں کورونا ازخودنوٹس کیس کی سماعت ہوئی ،چیف جسٹس گلزاراحمد کی سربراہی میں پانچ رکنی لارجر بنچ نے سماعت کی،اٹارنی جنرل نے کہاکہ ٹڈی دل کامسئلہ صوبائی ہے،خاتمے کیلئے معاونت کررہے ہیں،عدالت نے کہاکہ مشینری اوردیگرسامان سے متعلق تفصیلات تسلی بخش نہیں،جسٹس قاضی امین نے کہاکہ آکسیجن سلنڈرکی قیمت 5 ہزارسے کئی گنا بڑھ گئی ہے،حکومت شہریوں کے تحفظ میں ناکام ہوچکی ،جج ہونے کےساتھ ساتھ ایک شہری بھی ہوں، قانون کی عمل داری کہاں ہے؟۔

چیف جسٹس گلزاراحمد نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ لوگوں کوبڑی امیدتھی اس لیے تبدیلی لائے،جسٹس قاضی امین نے کہاکہ سیاسی لوگ ایک دوسرے پرکیچڑ اچھالنے آگئے ہیں،چیف جسٹس گلزاراحمد نے کہاکہ پوری حکومت کو 20 لوگ یرغمال نہیں بناسکتے۔

اٹارنی جنرل نے کہاکہ گندم کا بحران پیدا ہوا جس کی کوئی وجہ نہیں تھی،چیف جسٹس پاکستا ن نے کہاکہ حکومت ہرکام میں قانون کے مطابق ایکشن لے،16ملین ٹن گندم سندھ سے چوری ہوگئی،اس کا کیا بنا؟۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -