مہاتیر محمد کے احتساب کا ٹائٹینک بھی ڈوب گیا، ملائیشیا سے بڑی خبر آگئی

مہاتیر محمد کے احتساب کا ٹائٹینک بھی ڈوب گیا، ملائیشیا سے بڑی خبر آگئی
مہاتیر محمد کے احتساب کا ٹائٹینک بھی ڈوب گیا، ملائیشیا سے بڑی خبر آگئی

  

کوالالمپور(مانیٹرنگ ڈیسک) ملائیشیاءسے مہاتیر محمد نے کرپشن کا خاتمہ کیا اور ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کر دیا لیکن ان کے بعد آنے والوں نے ایک بار پھر کرپشن کو رواج دے ڈالا جس پر عمر رسیدہ مہاتیر محمد نے ایک بار پھر سیاست میں آنے کا اعلان کر دیا اور الیکشن جیت کر وزیراعظم بن گئے۔ 95سال کی عمر میں وزارت عظمیٰ سنبھالنے کے بعد انہوں نے ایک بار پھر کرپشن کے خلاف کریک ڈاﺅن کیا اور سابق وزیراعظم نجیب رزاق اور ان کی جماعت کے کئی لیڈروں کے خلاف کرپشن کے الزامات کے تحت مقدمات ختم کیے گئے لیکن مہاتیر محمد کے جاتے ہی ان کے یہ اقدامات الٹے موڑ دیئے گئے ہیں اور تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ ملائیشیاءاب ایک بار پھر اس دور کی طرف جا رہا ہے جب پورے ملک کو کرپشن نے جکڑ رکھا تھا۔

ویب سائٹ asia.nikkei.com مہاتیر محمد کے آدھی مدت تک وزیراعظم رہنے کے بعد معاہدے کے تحت ان کے اتحادی محی الدین یاسین باقی آدھی مدت کے لیے وزیراعظم کے عہدے پر براجمان ہیں اور انہوں نے نجیب رزاق کی جماعت کے عہدیداروں کے خلاف کرپشن کے مقدمات ختم کر ڈالے ہیں۔ ملائیشین عدلیہ نے ایسے وقت میں ان لوگوں پر درج مقدمات ختم کیے ہیں جب عوام نجیب رزاق کے خلاف مقدمے کے فیصلے کا انتظار کر رہے ہیں۔جن لوگوں کے خلاف مقدمات ختم کیے گئے ہیں ان میں مشرقی ریاست صباح کے سابق وزیراعلیٰ موسیٰ امان بھی شامل ہیں۔ موسیٰ امان پر کرپشن اور منی لانڈرنگ سے متعلقہ 4درجن سے زائد الزامات تھے لیکن اب پراسیکیوٹرز کا کہنا ہے کہ ثبوت نہ ہونے کی بناءپر ان پر درج مقدمات ختم کیے جا رہے ہیں۔دیگر لوگوں میں سابق وزیراعظم نجیب رزاق کے سوتیلے بیٹے ریزا عزیز بھی شامل ہیں جن کے خلاف مقدمات بھی ختم کر دیئے گئے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -