اسامہ بن لادن شہید تو آئی ایس آئی نے اسے پکڑنے میں امریکہ کی مدد کیوں کی؟ وزیر اعظم کے بیانات میں تضادات سامنے آگئے، پاکستانی چکرا کر رہ گئے

اسامہ بن لادن شہید تو آئی ایس آئی نے اسے پکڑنے میں امریکہ کی مدد کیوں کی؟ وزیر ...
اسامہ بن لادن شہید تو آئی ایس آئی نے اسے پکڑنے میں امریکہ کی مدد کیوں کی؟ وزیر اعظم کے بیانات میں تضادات سامنے آگئے، پاکستانی چکرا کر رہ گئے

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے اسامہ بن لادن کو قومی اسمبلی میں شہید قرار دیا گیا ہے جس پر سوشل میڈیا پر خوب ہنگامہ برپا ہے اور ایک نئی بحث شروع ہوگئی ہے۔ یہ سوال پوچھا جارہا ہے کہ اگر اسامہ بن لادن شہید ہے تو آئی ایس آئی نے اسے پکڑنے میں مدد کیوں کی۔

وزیر اعظم عمران خان نے گزشتہ برس جولائی میں امریکہ کا دورہ کیا تھا۔ اس دوران انہوں نے فوکس نیوز سے انٹرویو کے دوران اسامہ بن لادن کے حوالے سے بات کی۔ وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ آئی ایس آئی نے سی آئی اے کو اسامہ بن لادن کو پکڑنے میں مدد دی تھی۔ وزیر اعظم نے اس بات کی مزید وضاحت کرتے ہوئے کہا تھا کہ اسامہ بن لادن کے حوالے سے ایک فون کال کی اطلاع آئی ایس آئی نے سی آئی اے کو دی تھی جس کے بعد اس کے ٹھکانے کا پتا لگایا جاسکا تھا۔

جمعرات کو وزیر اعظم عمران خان نے قومی اسمبلی کے اجلاس سے خطاب کے دوران اسامہ بن لادن کو شہید قرار دیا ۔  عمران خان نے کہا کہ افغانستان میں ناکامی کی ذمہ داری پاکستان پر ڈالی گئی ،اسامہ بن لادن کو ایبٹ آباد میں شہید کردیا گیا ، اس کے بعد ساری دنیا نے ہمیں گالی نکالی اور ہمیں برا بھلا کہا۔

وزیر اعظم کے جمعرات کو قومی اسمبلی میں دیے گئے بیان کے بعد سوشل میڈیا پر ایک نئی بحث شروع ہوگئی ہے۔ سوشل میڈیا صارفین کی جانب سے انہیں کڑی تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔

روزی نامی ایک ٹوئٹر ہینڈل سے کہا گیا کہ " پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان نے نائن الیون کے ماسٹر مائنڈ اسامہ بن لادن کو شہید قرار دیا ہے۔ یقیناً پاکستان کیلئے دہشتگرد شہید ہی ہیں۔"

عمیر جمال نے کہا کہ پاکستان کے دفتر خارجہ نے امریکہ کی دہشتگردی کے حوالے سے سالانہ رپورٹ کی کھل کر مذمت کی اور اب وزیر اعظم عمران خان نے پارلیمنٹ میں جا کر اسامہ بن لادن کو شہید قرار دے دیا۔

شمع جونیجو نے وزیر اعظم عمران خان کی ایک پرانی ویڈیو شیئر کی جس میں ان سے اسامہ بن لادن کے حوالے سے سوال پوچھا گیا۔ وسیم بادامی نے سوال پوچھا کہ کیا آپ اسامہ بن لادن کو دہشتگرد سمجھتے ہیں۔ عمران خان نے اس سوال کے جواب میں کہا کہ ایک طرف کا دہشتگرد دوسرے کیلئے ہیرو ہوتا ہے، انہوں نے جارج واشنگٹن کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ وہ انگریزوں کیلئے دہشتگرد اور امریکیوں کیلئے ہیرو تھا۔

مزید :

قومی -