سندھ اسمبلی میں رولز توڑ کر بجٹ پاس کیا گیا، ایم کیوایم کا الزام 

سندھ اسمبلی میں رولز توڑ کر بجٹ پاس کیا گیا، ایم کیوایم کا الزام 
سندھ اسمبلی میں رولز توڑ کر بجٹ پاس کیا گیا، ایم کیوایم کا الزام 

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن ) متحدہ قومی موومنٹ(ایم کیو ایم ) کے اراکین سندھ اسمبلی کنورنویدجمیل اورمحمدحسین نے صوبائی حکومت پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ پیپلزپارٹی کی بجٹ میں معتصبانہ پالیسی نظرآئی،طریقہ کار کے مطابق بجٹ اجلاس چارگھنٹے چلنا تھالیکن عجلت کے ساتھ پانچ منٹ میں بجٹ پاس کرکے تمام رولز کو توڑا گیا ہے۔

سندھ اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایم کیو ایم اراکین کا کہنا تھا کہ ہمارے احتجاج کی وجہ سے وزیراعلیٰ مراد علی شاہ،ناصر شاہ اور سعید غنی تقریر نہیں کرسکے،سپیکر سندھ اسمبلی آغاسراج درانی نے کہا کہ میں تقریر نہیں کرنے دوں گا،اپوزیشن کے کسی ممبر کو تقریرنہیں کرنے دی گئی ،ہم نے ایوان میں کوئی تحریری طور پر کوئی تجویز نہیں دی،ہمارااحتجاج اپوزیشن لیڈرکے علم میں تھا۔ 

 ان کا کہنا تھا کہ ہم نے پورے بجٹ کاپوسٹ مارٹم کیا،جس عجلت میں بجٹ پاس کیا اس کی مثال نہیں ملتی،بجٹ میں کسی شہرکیلئے تعلیم سے متعلق سکیم نہیں،شہری علاقوں کو قبضہ شدہ علاقے کی طرح ڈیل کیاجارہاہے،کراچی کے نالوں پرکام کیلئے بھی وفاق فنڈزدے رہاہے ۔یہ سندھ اسمبلی کا سیاہ بجٹ ہے اورہم نے اسمبلی میں احتجاج ڈنکے کی چوٹ پر کیا۔

مزید :

قومی -سیاست -علاقائی -سندھ -کراچی -