ورلڈ بینک نے پنجاب پر عائدایک لاکھ 90ہزار ڈالرز کا جرمانہ معاف کردیا، جرمانے کی وجہ جان کر آپ حیران رہ جائیں گے 

ورلڈ بینک نے پنجاب پر عائدایک لاکھ 90ہزار ڈالرز کا جرمانہ معاف کردیا، جرمانے ...
ورلڈ بینک نے پنجاب پر عائدایک لاکھ 90ہزار ڈالرز کا جرمانہ معاف کردیا، جرمانے کی وجہ جان کر آپ حیران رہ جائیں گے 

  

لاہور ( ڈیلی پاکستان آن لائن ) ورلڈ بینک نے پنجاب حکومت پر عائد ایک لاکھ 90 ہزار ڈالرز کا جرمانہ معاف کر دیا ، سیکرٹری محکمہ ماحولیات پنجاب نے تصدیق بھی کر دی ۔

نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق پنجاب گرین ڈیویلپمنٹ پروگرام کو نیگیٹو کیٹیگری میں ڈالتے ہوئے ورلڈ بینک کی جانب سے پنجاب حکومت پر ایک لاکھ 90ہزار روپے کا جرمانہ عائد کیا گیا تھا ، پنجاب گرین ڈیویلپمنٹ پروگرام کو سال 2018 میں شروع ہو کر 2023 میں مکمل ہونا تھا مگر سال 2018سے 2020تک منصوبے پر کام شروع ہی نہ کیا جا سکا جس پر ورلڈ بینک نے سخت کارروائی کی ۔

سیکرٹری ماحولیات پنجاب زاہد حسین کے مطابق حکومتی حالیہ اقدامات سے ورلڈ بینک نے منصوبے کو نیگیٹو کیٹیگری سے نکال دیا اور ایک لاکھ 90 ہزار ڈالرز کا جرمانہ بھی معاف کر دیا،ورلڈ بینک نے منصوبے کی مدت میں دو سال کی توسیع کی منظوری بھی دے دی ، منصوبے کے تحت محکمہ ماحولیات کا دائرہ تحصیل اور ڈویژن سطح پر لے جانا تھا۔

سیکرٹری ماحولیات پنجاب زاہد حسین نے بتایاکہ وزیر اعلیٰ نے محکمہ کو تحصیل اور ڈویژن کی سطح پر قائم کرنے کیلئے ایک ہزار301 آسامیوں کی منظوری دے دی ، فضائی آلودگی کے خاتمے کیلئے ماحولیاتی پالیسی اور مانیٹرنگ سینٹر کے قیام کی بھی منظوری دی گئی ، ٹیکنالوجی ٹرانسفر سینٹر کے قیام اور گرین بلڈنگز کی تعمیر کا اعلان کر دیا گیا ہے ، حکومت پنجاب نے آلودگی کم کرنے کیلئے پانچ ارب روپے مختص کئے ہیں ،آلودگی کا باعث بننے والی ٹرانسپورٹ کو مرحلہ وار ختم کر دیا جائے گا،الیکٹرانک گاڑیوں کے استعمال اور زیادہ سے زیادہ شجر کاری کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔

مزید :

بزنس -