زراعت کی بہتری کے لئے حکومت کیا کرنے جا رہی ہے ؟ وزیر مملکت فرخ حبیب نے کسانوں کو خوشخبری سنا دی

زراعت کی بہتری کے لئے حکومت کیا کرنے جا رہی ہے ؟ وزیر مملکت فرخ حبیب نے کسانوں ...
زراعت کی بہتری کے لئے حکومت کیا کرنے جا رہی ہے ؟ وزیر مملکت فرخ حبیب نے کسانوں کو خوشخبری سنا دی

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر مملکت اطلاعات و نشریات فرخ حبیب کی زیر صدارت زراعت کے شعبے میں بہتری کیلئے کمیونیکیشن پالیسی کے حوالے سے اجلاس منعقد ہوا،جس میں وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے تحفظ خوراک جمشید اقبال چیمہ، سیکرٹری اطلاعات و نشریات شاہیرا شاہد، پرنسپل انفارمیشن افسر سہیل علی خان، ایم ڈی پی ٹی وی عامر منظور، ڈائریکٹر نیوز اینڈ کرنٹ افئیرز پی ٹی وی مرزا راشد بیگ، ایم ڈی اے پی پی مبشر حسن اور دیگر اعلی حکام نے اجلاس میں شرکت کی، اجلاس میں زراعت کے شعبے میں بہتری کیلئے کمیونیکیشن پالیسی کے حوالے سے غور کیا گیا۔

وزیر مملکت اطلاعات و نشریات فرخ حبیب نے اجلاس میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ زراعت ایک اہم شعبہ ہے، آبادی کا بہت بڑا حصہ اس شعبے سے منسلک ہے، وزیر اعظم عمران خان کا ویژن ہے کہ تعمیراتی شعبے کی طرح زراعت صنعت کو بھی اٹھانا ہے،وزارت اطلاعات اور ذیلی ادارے زرعی ترقی کو بہتر انداز میں اجاگر کرنے میں کلیدی کردار ادا کریں گے۔

معاون خصوصی جمشید اقبال چیمہ نے بتایا کہ زراعت کیلئے آئندہ مالی سال میں رواں مالی سال سے سات گنا زیادہ بجٹ رکھا گیا ہے،شوگر، ٹیکسٹائل، پیسٹی سائیڈ، فلور ملز، رائس ملز انڈسٹری کی حوصلہ افزائی کریں گے،سابقہ دور میں کسانوں کا بری طرح استحصال کیا گیاجس سے زراعت کا نقصان ہو ا،موجودہ  حکومت نے سبسڈی کے لئے 680 ارب روپے کے خطیر فنڈز مختص کئے۔

جمشید اقبال چیمہ نےکہا کہ گندم ،گنے کی امدادی قیمت مقرر کی جاتی ہے ،باقی ساری فصلیں اوپن ہیں،سابقہ دور میں گنے کی کم قیمت دے کر کسان کی جیب پر90 ارب کا ڈاکہ ڈالا گیا، پہلی ترجیح کسان ، دوسرا ماحولیاتی آلودگی سے پاک صنعتکاری کا فروغ ہے، حکومت نے اس مقصد کے لئے آئندہ مالی سال میں 10ارب روپے مختص کئےہیں،کم درجہ حرارت والےعلاقوں میں کسانوں کو60 ٹن سویابین کابیج دیاہے،ڈیرہ اسماعیل خان کو دالوں کی مارکیٹ بنا رہے ہیں،فاٹا میں ریسرچ سنٹرز بنا رہے ہیں۔

مزید :

قومی -کسان پاکستان -