کارگل جنگ میں سپورٹ پر بھارت اسرائیل کو اسلحہ دے رہا ہے: سابق اسرائیلی سفیر کا دعویٰ

کارگل جنگ میں سپورٹ پر بھارت اسرائیل کو اسلحہ دے رہا ہے: سابق اسرائیلی سفیر ...
کارگل جنگ میں سپورٹ پر بھارت اسرائیل کو اسلحہ دے رہا ہے: سابق اسرائیلی سفیر کا دعویٰ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

یروشلم (ڈیلی پاکستان آن لائن )بھارت کی جانب سے 1999 کی کارگل جنگ میں اسرائیلی تعاون پر اب غزہ جنگ کے لئے اسرائیل کو اسلحہ فراہم کیا جا رہا ہے۔یہ دعویٰ اسرائیل کے ایک سابق سفیر Daniel Carmon نے کیا جو بھارت میں بھی تعینات رہ چکے ہیں۔
اسرائیلی میڈیا کو دیے گئے انٹرویو میں Daniel Carmon نے کہا کہ اسرائیل ان چند ممالک میں سے ایک تھا جس نے کارگل جنگ کے دوران بھارت کو اسلحہ فراہم کیا تھا۔2014 سے 2018 کے دوران بھارت میں اسرائیلی سفیر کے طور پر کام کرنے والے Daniel Carmon نے کہا کہ 'بھارتیوں کی جانب سے ہمیں ہمیشہ یاد دلایا جاتا تھا کہ اسرائیل کارگل جنگ کے دوران ہمارے ساتھ تھا، بھارتی کبھی اس بات کو بھول نہیں سکتے اور اب وہ ممکنہ طور پر احسان کا بدلہ چکا رہے ہیں'۔سابق اسرائیلی سفیر کا بیان اس وقت سامنے آیا ہے جب مختلف رپورٹس میں دعویٰ کیا گیا تھا کہ بھارت کی جانب سے غزہ جنگ کے لئے ڈرونز اور گولہ بارود اسرائیل کو سپلائی کیا گیا ہے۔فروری 2024 میں میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا کہ بھارت کی جانب سے اسرائیل کو 20 جدید ترین Hermes 900 ڈرونز فراہم کئے گئے تھے۔یہ ڈرونز حیدرآباد دکن کی فیکٹری میں تیار کئے گئے اور اس فیکٹری کو اسرائیل نے ہی قائم کیا تھا۔اسرائیلی میڈیا کے مطابق مئی میں سپین نے ایک مال بردار بحری جہاز کو بھارت سے اسرائیل جاتے ہوئے روکا تھا۔اس بحری جہاز میں 27 ٹن فوجی سپلائی موجود تھی۔بھارتی حکومت کی جانب سے ان رپورٹس کی تصدیق نہیں کی گئی اور اب سابق اسرائیلی سفیر کے بیان پر بھی کوئی ردعمل جاری نہیں کیا گیا۔