امریکہ۔۔۔دن سات اور میلے آٹھ! (1)

امریکہ۔۔۔دن سات اور میلے آٹھ! (1)
امریکہ۔۔۔دن سات اور میلے آٹھ! (1)

  


عالمی یوم خواتین پر لکھتے ہوئے مَیں نے عرض کیا تھا کہ امریکہ میں بعض ایسے ایسے قومی دن منائے جاتے ہیں، جو مضحکہ خیز بھی ہیں اور اکثر ناقابل توجہ بھی۔ ایسے ایام پر خود امریکہ میں سوائے چند خواتین وحضرات کوئی عمل یا ردعمل دیکھنے میں نہیں آتا۔ لیجئے مَیں آپ کو سال بھر کے منائے جانے والے ایام کی تفصیلات بتایا ہوں۔ یہ2015ء کے کیلنڈر کے مطابق ہیں ان میں سے بعض میں ہر سال ردوبدل ہوتا رہتا ہے۔ ہر سال، سال نوکا آغاز نیو ایئر ڈے سے ہوتا ہے۔ یہ چھٹی گزشتہ سال کے کرسمس کی چھٹیوں میں شامل ہوتی ہے۔ بعض ادارے ایک آدھ دن کے لئے کھلتے ہیں اور نئے سال کے لئے پھر چھٹی آ جاتی ہے۔ چار جنوری کوTrivia day منایا جاتا ہے۔نام سے ظاہر ہے یہ معمولی باتوں کا دن ہے، کالج کے طلبہ یہ بے مقصد دن مناتے ہیں1960ء میں اس کا آغاز ہوا اور اب اسے قومی دن کی حیثیت حاصل ہے۔ پانچ جنوری کو پرندوں کا قومی دن ہے، پرندوں کا دیکھنا بھی امریکی مشاغل میں سے ایک ہے۔ یہ ہجرت کرنے والے پرندوں کی ہجرت اور واپسی کے سلسلے میں منایا جاتا ہے۔ چھ جنوری کوCuddle dayہے۔ کسی کو فرطِ محبت میں چمٹا لینے کوCuddle کہتے ہیں یہ گویا عزیز و اقرباء سے محبت جتانے کا دن ہے۔ آٹھ جنوری مشہور امریکی گلوکار ایلویس پریسلے کا یوم پیدائش ہے۔ ایلویس پریسلے کو امریکن ’’کنگ‘‘ کہتے ہیں اور ایک بھاری اکثریت اس کے مرنے کی قائل نہیں ہے۔ ہر سال کئی خواتین وحضرات کسی دور دراز مقام پر ایلویس پریسلے کو جیتا جاگتا اور کھلی آنکھوں سے دیکھنے کا دعویٰ کرتے ہیں۔ 13جنوری ربڑ کی بطخ کا دن ہے، جو ایک کھلونا ساز کمپنی نے نہانے کے ٹب میں بچوں کا دل بہلانے اور نہانے سے گریز کے تدارک کے طور پر متعارف کرائی تھی اب باقاعدہ اس کا قومی دن منایا جاتا ہے۔ 1970ء میں ایک امریکی گلوکار یم ہیننن نے ایک گیت گایا تھاRubber duckies جو بہت مقبول ہوا تھا۔ یہ گیت بچوں کے ڈرامائی پروگرام سیسمی سٹریٹ میں شامل تھا۔14 جنوری کو پالتو جانوروں کو لباس پہنانے کا دن ہے۔ اس دن کتوں بلیوں کو ہیٹ، ٹائی، بو وغیرہ لگائی جاتی ہیں اور مالک کی پرواز تخیّل پر منحصر ہے کہ وہ کیسا لباس پہناتا ہے۔اس دن کا آغاز 2009ء میں جانور دوست لین پیچ نے کیا تھا۔ 17جنوری کو بنجامن فرینکلن کا دن ہے۔ آزادی کی دستاویز لکھنے والے امریکی صدر آبائے وطن میں شمار ہوتے ہیں۔ 19جنوری کو مارٹن لوتھر کنگ (جونیئر) کا دن ہے وہ سیاہ فام جو سیاہ فاموں کے حقوق کی جدوجہد میں مارا گیا۔30جنوری کو پائی ڈے کہا جاتا ہے یہ کھانے والی پائی نہیں یہ حساب والی پائی ہے۔2009ء میں کانگریس کے ایوان زیریں نے یہ دن منانے کا فیصلہ کیا ہے۔

پچیس جنوری کو اُلٹا دن منایا جاتا ہے، جی ہاں Opposite dayکو اور کیا کہیں گے۔ کئی لوگ اسے سات جنوری کو مناتے ہیں اور کچھ لوگوں کے لئے ہر مہینے کی پچیسویں الٹا دن ہے۔ اس کا مطلب یہ ہے کہ ہر بات جو کہی جا رہی ہے اس کے برعکس ہے، دھوپ کو چھاؤں، چھاؤں کو دھوپ، سردی کو گرمی اور گرمی کو سردی کہا جاتا ہے۔ اٹھائیس جنوری کو کازو ڈے کہا جاتا ہے۔ KAZOO مُنہ سے بجانے کا ایک ساز ہے ایک نلکی پر درمیان میں ایک ڈھکن نما چیز لگی ہوتی ہے، جس میں سوراخ ہوتے ہیں، ہونٹوں سے لگا کر پھونک مارنے سے بجتا ہے دو امریکیوں نے مل کر یہ ساز1840ء میں ایجاد کیا تھا اور ریاست جارجیا کے قومی میلے میں1850ء میں متعارف کرایا تھا۔

29جنوری کو معمے بازی کا دن ہے۔ اخبارات میں شائع ہونے والیPuzzles کے علاوہ معمول کی کتابیں بھی چھپتی ہیں اور بعض لوگ سفر میں اس معمے بازی سے شغل کرتے پائے جاتے ہیں۔31 جنوری کو الٹے پاؤں چلنے کا دن ہے۔ اس دن کا زیادہ تر تو پتہ نہیں چلتا، لیکن آخر قومی دن ہے، کچھ نہ کچھ لوگ پارکوں میں صبح کی سیر کے وقت الٹے پاؤں چلتے دکھائی دے جاتے ہیں۔اس کی اصل یا تاریخ کے بارے میں کوئی علم نہیں ہے۔

فروری کا آغاز سپر باؤل سے ہوتا ہے یکم فروری سے امریکی فٹ بال کے مقابلے شروع ہوتے ہیں۔ دو فروری کو گراؤنڈ ہاگ ڈے منایا جاتا ہے۔ اس سلسلے میں ایک دلچسپ فلم بھی اسی نام سے ہے جس میں ہیروجو کچھ ایک روز کرتا ہے دوسرے روز صبح اٹھتا ہے تو سب کچھ پہلے دن کی طرح شروع ہو جاتا ہے۔ آٹھ فروری کو بوائے سکاؤٹس کا دن ہے۔ نو فروری کو درد دندان کا دن ہے یہ ہرشی چاکلیٹ کمپنی کے آغاز9فروری1894ء سے منسوب ہے شائد اس لئے کہ میٹھا کھانے سے دانت کا درد ہو سکتا ہے۔14فروری کو ویلنٹائن ڈے ہے اس کی اصل کے بارے میں متضاد خیالات ہیں، لیکن یہ خاصا مقبول اور مشہور ہے۔15فروری کوGum drops dayہے۔ جیلاٹن سے بنی اور میٹھے میں لپٹی ہوئی گولی کو گم ڈراپ کہتے ہیں۔16فروری کو یوم الصدور، یعنی Presidents' day ہے۔ یہ پہلے امریکی صدر جارج واشنگٹن کا یوم پیدائش ہے، لیکن اب اسے تمام امریکی صدور کا دن قرار دے دیا گیا۔ اس کا آغاز امریکی صدر ہنری ٹرومین نے کیا تھا۔’’Fat tuesday ‘‘ اس بار 17فروری کو واقعہ ہوا، لیکن یہ فروری کے کسی بھی منگل وار کو منایا جاتا ہے۔ اسےShrove tuesday بھی کہا جاتا ہے اور اسی کو Mardi GRAW (تلفظ مار دی گرا) بھی کہا جاتا ہے۔ اسے تین بادشاہوں کا دن بھی کہا جاتا ہے یہ مذہبی تہوار تھا، لیکن اب کارنیوال وغیرہ کے سوا کچھ نہیں رہا اور مخصوص علاقوں میں ہی اس کی رونق نظرآتی ہے۔ 22فروری کو حُسنِ اخلاق یا حلیمی کا دن ہے Be humbe day کے دن اپنی بڑائیاں بیان کرنے طرم خانی جتانے کی بجائے کسر نفسی کا اظہار کیا جاتا ہے۔ آج تک یہ مظاہرہ کبھی نظر نہیں آیا۔26فروری کو کارنیوال ڈے منایا جاتاہے اور27فروری کو برفانی ریچھ کا دن ہے۔

دو مارچ کو مطالعۂ کتب کا دن ہے جو ڈاکٹر سیوس کے یوم پیدائش پر منایا جاتا ہے۔ تین مارچ قومی ترانے کا دن ہے۔امریکی قومی ترانہ ایک وکیل ’’فرانسس سکاٹ‘‘ کی نظم تھی، جو1812ء میں برطانوی فوجوں کے ریاست بالٹی مور پر حملے کے سلسلے میںDefence of Fort Mc Henryکے عنوان سے لکھی گئی تھی۔ تاہم اس کے کوئی تاریخی ثبوت موجود نہیں ہیں۔ تین مارچ 1931ء کو اسے قومی ترانے کی حیثیت دے دی گئی۔ چھ مارچ دندان سازوں کا دن ہے۔ مارچ کے پہلے اتوار سے گھڑیاں آگے کی جاتی ہیں۔ اگر اتوار پہلی تاریخ کو آ جائے تو پھر اگلے اتوار کو گھڑیاں ایک گھنٹہ آگے کی جاتی ہیں۔اس بار آٹھ مارچ کو ایسا کیا گیا۔12مارچ گرلز سکاؤٹس ڈے اور16مارچ سب اچھا کا دن ہے، یعنی جو بھی کرو وہی درست ہے۔ ہر غلط کام کوEverything you do is right والے دن درست قرار دیا جائے گا۔17مارچ کو سینیٹ پیٹرک ڈے ہے۔ یہ عیسائیوں کا مذہبی دن ہے، لیکن آئر لینڈ کے لوگ اسے مناتے ہیں۔ اس روز آئر لینڈ کے امریکی لوگ ایک بڑی پریڈ کا اہتمام کرتے ہیں۔20مارچ کو آغاز بہار کا دن ہے۔ 22مارچ کوGoof off day ہے۔ آرام کرنے موج میلہ کرنے اور سستانے کا دن کہہ لیجئے۔27مارچ National joe day ہے۔joeکسی بھی عام آدمی کے لئے بولا جاتا ہے اور وہ تمام لوگ جن کا نام Joann, johanna- jacphiner joseph, joey, jo, joe یا Judie ہو وہ جو کہلا سکتا ہے اور یہ سب اسے اپنا دن سمجھتے ہیں۔ اگر کسی کو اپنا اصلی نام پسند نہ ہو تو وہ اس دن خود کو joe کہلا سکتا ہے اور یہ سب اسے اپنا دن سمجھتے ہیں۔ بعض لوگ اس روز کو قانونی طور پر اپنا نام تبدیل کرنے کے لئے استعمال کرتے ہیں۔29مارچ کو پام سنڈے ہے یہ مذہبی دن ہے۔ (جاری ہے)

اپریل کا آغاز اپریل فول سے ہوتا ہے اس کی اصل کے بارے میں اختلافات ہیں، لیکن یہ منانے سے منع کرنے والے مسلمان جس طرح اسے مسلمانوں سے مذاق کا دن بتا کر منع کرتے ہیں اُس کی کوئی اصلیت نہیں ہے۔ یہ عملی مذاق کا دن ہے رومن ایسا دن مناتے تھے ہندوؤں کی ہولی بھی عملی مذاق کا پہلو لئے ہوئے ہے، لیکن یہ رنگ ڈالنے یا بعض جگہ بیویوں کا شوہروں کو ڈنڈوں سے پیٹنے تک محدود ہے۔ سپین اور سپین کے مقبوضہ جنوبی امریکہ کے کئی ممالک میں اس طرز پر 28دسمبر کو مقدس بھولے لوگوں کا دن (day of holy innocents) منایا جاتا تھا۔ برازیل میں اب بھی یکم اپریل کو جھوٹ کا دن کے طور پر منایا جاتا ہے۔ ہلکے پھلکے اور بے ضرر مذاق کی حد تک تو یہ درست ہے،لیکن بعض لوگ اسے تکلیف دہ بنا دیتے ہیں، جو درست نہیں ہے۔ اکثر دیکھنے میں آیا ہے کہ یکم اپریل کو بعض سچی باتوں کو لوگوں نے مذاق سمجھ کر مذاق میں اڑا دیا اور بعض اوقات مذاق کو سچ مان لیا۔ تین اپریل کو جمعہ اور عیسائیوں کا گڈ فرائیڈے مذہبی تہوار ہے۔ یہودیوں کا پاس ادور بھی اسی تاریخ سے شروع ہو رہا ہے۔ پانچ اپریل کو ایسٹر ہے، سات اپریل کو گھر کے کام کاج سے چھٹی کا دن (no home work day) ہے۔ نو اپریل کو اپنا نام خود رکھیں کا دن منایا جاتا ہے۔ دس اپریل کو نوجوان (نو آموز) لکھاریوں کی حوصلہ افزائی کا دن ہے۔ 11اپریل کو یہودیوں کے پاس ادور کا خاتمہ ہو جاتا ہے۔ 12اپریل کو (Big wind day) منایا جاتا ہے بارہ اپریل 1934ء میں دو سو اکتیس (231) میل فی گھنٹہ کی رفتار سے ہوا چلی تھی جس کی یاد میں یہ دن منایا جاتا ہے۔ پندرہ اپریل کو نئے سال کے ٹیکس جمع کرانے کی آخری تاریخ ہے اس روز ڈاک خانے پر لوگوں کی لمبی قطاریں لگی ہوتی ہیں۔ ڈاک خانے (اکثر) رات بھر کھلے رہتے ہیں کیونکہ رات کے 12بجے تک پوسٹ ہو جانے والے ٹیکس کاغذات بر وقت سمجھے جاتے ہیں۔ ڈاک خانوں کے باہر ٹوکریاں رکھ دی جاتی ہیں تاکہ لوگ ان میں اپنے ٹیکس پیپر کے لفافے ٹکٹ لگا کر ڈال جائیں۔ اکثر یہ تاریخ آگے بھی کر دی جاتی ہے۔ 22اپریل یوم الارض (Earth day) کے طور پر مناتے ہیں۔24اپریل کو (Arbor day)، یعنی شجر کاری کا دن ہے اس کا آغاز 1870ء میں ہوا، لیکن تمام ریاستیں الگ الگ دن کو شجر کاری کے دن کے طور پر مناتے ہیں۔ 26اپریل کو دوستوں سے گلے ملنے کا دن ہے۔ 27اپریل کو کہانی سنانے کا دن ہے اور30 اپریل کو دیانت داری کا قومی دن ہے ظاہر ہے دیانت داری کے لئے سال میں ایک دن کافی ہے۔

یکم مئی کو دُنیا بھر میں شکاگو (ریاست الی ناتے) کے مزدوروں کی یاد میں یوم مزدور منایا جاتا ہے۔ امریکہ میں ایسا کچھ نہیں ہے۔ دو مئی کو بھائی بہنوں کا دن ہے۔ چار مئی سے آٹھ مئی تک اساتذہ کی حوصلہ افزائی کا ہفتہ منایا جاتا ہے، جس میں چھ مئی نرسوں کا دن ہے۔10مئی کو یوم مادراں (Mothers day) ہے۔ 23مئی کو خوش بخت پینی کا دن ہے۔ امریکی ڈالر کی اکائی سینٹ ہے، لیکن برطانوی اثر کے تحت ایک سینٹ کے سکے کو پینی (پنس) کہا جاتا ہے۔ اس روز گرمی پڑی پینی اُٹھا لی جاتی ہے اور اسے خوش بختی کی علامت سمجھا جاتا ہے۔ پینی سے امریکہ میں کوئی چیز خریدی نہیں جا سکتی، لیکن بعض امریکی ایک پینی واپس لینے کے لئے کاؤنٹر کے سامنے سے ہٹنے کا نام نہیں لیتے اور کیشئر کو توجہ دلانے کے لئے کہتے ہیں ’’تم نے میری رقم ادا کرنی ہے‘‘ ’’you owe me money‘‘۔ ہمارے دیسی پینی کو پھینک بھی دیتے ہیں بعض سٹریل بے گھر بھی پینی کو پھینک دیتے ہیں۔ اکثر لوگ پینی کو اُٹھا بھی لیتے ہیں۔ اگر تصویر والا رُخ اوپر ہو تو ایسی پینی اٹھانا خوش بختی کی علامت ہے، اُلٹی پڑی ہوئی پینی کو اُٹھانا بدبختی ہے، اس لئے اسے اُٹھانے سے گریز کیا جاتا ہے۔ امریکی کیشئر ایک پینی کے لئے آپ کا ڈالر، بلکہ 20ڈالر تک کا نوٹ توڑنے کے لئے تیار ہو جائے گا۔ البتہ دیسی لوگ اکثر رعایت کر دیتے ہیں اور قیمت میں ایک پینی کی کمی کو برداشت کر لیتے ہیں۔ پینی کا چلن اس لئے بہت ہے کہ اکثر چیزوں کی قیمتیں چند ڈالر اور ننانوے سینٹ ہوتی ہیں، اس لئے خریدو فروخت میں پینی بدستور شامل رہتی ہے۔ بعض لوگ گھروں میں پینیاں جمع کرتے رہتے ہیں اور جب کوئی مرتبان وغیرہ بھر جاتا ہے تو کسی بینک میں لے جا کر تبدیل کر لیتے ہیں کچھ بینکوں نے اس مقصد کے لئے مشینیں لگا رکھی ہیں جن میں پینیاں ڈالیں تو وہ گن کر قیمت کی پرچی نکال دیتی ہیں جسے کاؤنٹر پر لے جا کر آپ اتنے ڈالر وصول کر سکتے ہیں۔ اگر اس بینک میں آپ کا اکاؤنٹ نہ ہو تو وہ فیس کے طور پر تین چار ڈالر وصول کر لیتے ہیں۔25مئی میموریل ڈے، یعنی شہید فوجیوں کا دن ہے۔ دو جون کو راکی روڈ ڈے ہے۔ یہ کسی پتھریلی سڑک سے متعلق نہیں ہے، بلکہ ایک بسکٹ نما مٹھائی ہے۔ 1929ء میں سٹاک مارکیٹ کریش ہوئی تو ڈریئر آئس کریم کے بانی ولیم ڈریئر نے مال ڈوبنے کا صدمہ بھلانے کے لئے اس کا آغاز کیا۔ تین جون کو Repeat day ہے، ہر چیز کو بار بار دہرائیں، گانا سنیں تو بار بار فلم دیکھیں تو بار بار کئی دوست دوستوں کو ایک ہی پیغام یا ای میل بار بار بھیج کر یہ دن مناتے ہیں۔ پانچ جون کوDont day( ڈو نٹ ڈے) اور عالمی یوم ماحولیات ہے۔ ڈو نٹ ڈے کا آغاز فلاحی کام کرنے والی تنظیم سالویشن آرمی نے1938ء میں اُن لوگوں کی یاد میں کیا تھا، جنہوں نے جنگ عظیم اول میں فوجیوں کو ڈو نٹ بھیجے تھے۔ چھ جون ڈی ڈے ہے اس کی یاد گار ورجینیا میں ہے۔ جنگ عظیم دوم میں نار منڈی پر اتحادی فوجوں کے حملے کی یاد پر منایا جاتا ہے۔ سات جون کو چاکلیٹ آئس کریم ڈے ہے۔ آٹھ جون کو بیسٹ فرینڈز ڈے ہے۔14جون کو فلیگ ڈے ہے۔ سرکاری طور پر منایا جاتا ہے۔1916ء میں صدر ووڈرو ولسن نے اس دن کو منانے کا اعلان کیا تھا۔1949ء میں کانگریس نے اسے وفاقی چھٹی کے دن کے طور پر منانے کی منظوری دی۔17 جون کو ’’سبزی کھایئے‘‘ دن ہے۔ 21جون کو فادرز ڈے ہے۔ 22جون کو چاکلیٹ ایکلیئر ڈے ہے۔ ایکلیئر کریم سے بھری پیسٹری ہوتی ہے، جس پر خوب سارا چاکلیٹ تھوپا جاتا ہے۔25جون لکڑی کی بلیوں سے بنائے گئے جھونپڑے کا دن ہے۔ مقصد شہری مصروف زندگی سے فرار حاصل کر کے قدرتی ماحول میں کچھ وقت گزارنا ہے۔ 27جون دھوپ کا چشمہ لگانے کا دن ہے۔29جون کیمرے کا دن ہے۔تین جولائی دھوپ سے پرہیز کا دن ہے۔ چار جولائی امریکہ کا یوم آزادی ہے۔ یہ دن خاموشی سے اس لئے نہیں گزرتا کہ وفاقی چھٹی کا دن ہے۔ سرکاری دفاتر بند ہوتے ہیں۔ چھ جولائی فرائیڈ چکن ڈے ہے۔ سات جولائی میکرونی ڈے ہے۔ دس جولائی گائے کو سراہنے کا دن ہے۔ 11جولائی تنہائی کو خوش باش رہ کر گزارنے کا دن ہے۔ 12 جولائی کو پیکان پائی کا دن ہے۔ پیکان امریکہ اور میکسیکو میں پائی جانے والی ایک اخروٹ نما چیز ہے، جس کا مغز اخروٹ کے مغز کی مانند، لیکن قدرے لمبوترا ہوتا ہے۔ کھانے میں گول روٹی نما چیز پائی کہلاتی ہے۔ پورا پیزا بھی پیزا پائی ہے۔ پیکان پائی ایک میٹھی روٹی پر پیکان کے مغز لگا کر تیار کی جاتی ہے۔

(جاری ہے)

مزید : کالم