تیونس کا عجائب گھر حملوں کے بعد دوبارہ کھولنے کا فیصلہ کرلیا گیا

تیونس کا عجائب گھر حملوں کے بعد دوبارہ کھولنے کا فیصلہ کرلیا گیا

تیونس (این این آئی)تیونس کے دارالحکومت کا باردو عجائب گھر گذشتہ ہفتے کے ہلاکت خیز حملے کے بعد دوبارہ کھولنے کا فیصلہ کرلیا جس میں کم از کم 22 افراد مارے گئے تھے۔ عجائب کے دوبارہ کھلنے کے موقعے پر ایک کنسرٹ اور عوامی جلسہ بھی منعقد کیا جائے گا۔ حکام کے مطابق وہ دنیا کو یہ پیغام دینا چاہتے ہیں کہ حملہ آور اپنے مقصد کے حصول میں ناکام رہے ہیں۔ایک روز قبل تیونس کے وزیرِ اعظم حبیب الصید نے چھ پولیس افسران کو برطرف کر دیا تھا حبیب الصید کے دفتر سے جاری کردہ بیان کے مطابق انھوں نے میوزیم کے دورے کے دوران کئی خامیاں دیکھیں۔

اس عجائب گھر رومن دور کا پچی کاری کا کام اور دوسرے کئی نوادر محفوظ ہیں۔حکام نے کہا ہے کہ گذشتہ بدھ کو ہونے والے اس حملے میں دو بندوق بردار مارے گئے تھے، جب کہ تیسرا فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا تھا۔

مزید : عالمی منظر