سرکاری ملازمین آج دفاتر کا بائیکاٹ کر یں گے ،کل وزیر اعلٰی ہاؤس کے باہر دھرنا ہو گا

سرکاری ملازمین آج دفاتر کا بائیکاٹ کر یں گے ،کل وزیر اعلٰی ہاؤس کے باہر ...

لاہور( خبرنگار) صوبے بھر کے سرکاری ملازمین نے ایوانِ وزیر اعلیٰ کے سامنے دن رات احتجاجی دھرنے کے ’’ پلان‘‘ کو حتمی شکل دے دی ہے۔ اس حوالے سے اپیکا کی کال پر لاہور میں واقع سرکاری دفاتر میں سرکاری ملازمین نے گزشتہ روز دو گھنٹے قلم چھوڑ ہڑتال کی جبکہ سرکاری ملازمین نے آج دفاتر کا مکمل بائیکاٹ کرنیکا اعلان کیا ہے۔ اس حوالے سے ایپکا کے صوبائی و مرکزی رہنماؤں حاجی محمد ارشاد ، لالہ محمد اسلم، فضل داد گجر ، یونس بھٹی اور محمد اشرف سمیت ارشد باجوہ نے گزشتہ روز صحافیوں کو بتایا کہ ایپکا کے چارٹر آ ف ڈیمانڈ پر حکومت کی طرف سے کوئی مثبت پیش رفت نہیں ہوئی۔ اس میں میاں مجتبیٰ شجاع الرحمن صوبائی وزیر خزانہ و سابق صوبائی وزیر راناثناء اللہ کے بار ہا وعدوں کے باوجود مطالبات کی منظوری کا محکمہ خزانہ کی طرف سے نوٹیفیکشن نہیں کیا گیا ۔ملازم دشمنی کے خلاف ایپکا پنجاب کے تمام گروپوں کو ایک پلیٹ فارم پر اکٹھا کر دیا گیا ہے اور کل 26 مارچ 2015 ء کو وزیر اعلیٰ ہاؤس، 7 کلب روڈ، لاہور ہونے والے ڈے اینڈ نائٹ فیصلہ کن دھرنے کا اعلا ن کیا گیا ہے جس میں لاہور بھر کے تمام محکمہ جات کے علاوہ پنجاب بھر کے تمام اضلاع کے محکمہ جات کے لاکھوں سرکاری ملازمین بھرپور شرکت کریں گے اوردن رات بھر پور احتجاج کریں گے جو کہ مطالبات جن میں تنخواہوں میں اضافہ کرتے ہوئے ملک بھر کے تمام محکموں کے لیے یکساں نئے نظر ثانی شدہ پے سکیل کی منظوری دی جائے ،گریڈایک تا سولہ تک تمام سرکاری ٹیکنیکل و نان ٹیکنیکل ملازمین کوبلا امتیاز ٹائم سکیل پروموشن کا اجراء کیا جائے ورنہ دھرنا جاری رہے گا ۔اس سلسلے میں صوبہ بھر سے قافلے لاہور کی طرف رواں دواں ہوچکے ہیں جن کے استقبال کے لیے ایکشن کمیٹیاں بنا دی گئی ہیں

مزید : میٹروپولیٹن 1