افغانستان ،2امریکی ڈرون حملے ،15پاکستانی شدت پسندوں سمیت 21جنگجو ہلاک ،متعدد زخمی

افغانستان ،2امریکی ڈرون حملے ،15پاکستانی شدت پسندوں سمیت 21جنگجو ہلاک ،متعدد ...

کابل/پشاور( آن لائن ،اے این این, مانیٹرنگ ڈیسک) افغانستان کے صوبوں ننگرہاراورکنڑمیں دو امریکی ڈرون حملوں میں 15 پاکستانی شدت پسندوں سمیت 21 جنگجوہلاک اورمتعددزخمی ہوگئے جبکہ ہلاک ہونے والوں میں کالعدم لشکر اسلام کے امیر منگل باغ کاڈرائیورشاکرسپاہ بھی شامل ہے ۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق منگل کی صبح امریکی جاسوس طیاروں نے افغان صوبہ ننگرہار میں پاک افغان سرحد کے قریب ضلع نازیان میں شدت پسندوں کے ٹھکانے کو دو گائیڈڈ میزائلوں سے نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں نوپاکستانی شدت پسند ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے ۔مارے جانے والوں میں خیبر ایجنسی میں سرگرم کالعدم لشکر اسلام کے امیر منگل باغ کے ڈرائیور سمیت7اہم شدت پسند کمانڈر شامل ہیں۔افغان حکام کے مطابق یہ کارروائیاں انٹیلی جنس اطلاعات پر کی گئی ہیں۔خیبر ایجنسی میں پاک فوج کے آپریشن کے باعث پاکستانی شدت پسندوں نے اس علاقے میں پناہ لے رکھی تھی تاہم ڈرون حملے میں منگل باغ کی ہلاکت یا زخمی ہونے کے بارے میں کچھ نہیں بتایا گیا۔افغان سکیورٹی حکام کے مطابق امریکی ڈرون حملے میں کالعدم تحریک طالبان پاکستان اور کالعدم لشکر اسلام کے مشترکہ ٹھکانے کو نشانہ بنایا گیا ۔دوسرے حملے میں افغا ن صوبے کنڑ میں جاسوس طیارے نے ایک مکان اور گاڑی پر 4 میزائل داغے جس کے نتیجے میں کالعدم تحریک طالبان کے چھ جنگجوؤں سمیت 12 شدت پسند مارے گئے۔ہلاک ہونے والوں میں تحریک طالبان پاکستان کے علاوہ اسلامی موومنٹ ازبکستان کے جنگجو بھی شامل ہیں۔ ذرائع کے مطابق حملے میں ازبکستان موومنٹ کا سربراہ یاسر فرابی سمیت ، عبداللہ فرابی ، خالد فرابی ، جعفر فرابی اور عمر بن داؤد بھی ہلاک ہوا ہے۔جبکہ دوسری جانب تحریک طالبان کی مرکزی شوریٰ کے اہم رکن مولوی مجاہد اللہ ، قاری اسامہ ، شیخ منصور ، کمانڈر ایوب جان اور کمانڈر شاہ جی گل بھی ہلاک ہونے والوں میں شامل ہیں۔تاہم تاحال کسی آزاد ذرائع نے اس حملے کے دوران ہلا ک ہو نے والے کسی شخص کی تصدیق نہیں کی۔

مزید : صفحہ اول