اسد قیصر کی کردار کشی کرنیوالے جلد بے نقاب ہونگے ،سہیل خان

اسد قیصر کی کردار کشی کرنیوالے جلد بے نقاب ہونگے ،سہیل خان

تورڈھیر(نمائندہ خصوصی)پختونخوااسمبلی اسد قیصر کے خلاف گمنام خط کے ذریعے بدعنوانیوں کے من گھڑت اوربے بنیادالزامات لگانے والا ذاتیات پر اُتر آیا ہے جوانتہائی نیچ حرکت ہے جھوٹے الزامات سے سپیکر کی کردارکشی کرنے والا جلد یابدیربے نقاب ہوگا جس کے خلاف بھی عدالت سے ضرور انصاف طلب کرینگے سپیکراسد قیصر وہ درویش صفت شخصیت ہیں جو سپیکر ہاؤس میں اپنے مہمانوں کی خاطر تواضع بھی اپنی پاکٹ منی سے انتہائی کم اخراجات سے کرتے ہیں ان خیالات کااظہار تحصیل ناظم لاہور سہیل خان، تحصیل کونسلران محمداسماعیل خان اور جان محمد جبکہ سابق صوبائی امیدوار ڈاکٹرفضل الٰہی نے ایک مشترکہ پریس کانفرنس کے دوران کیا ہے اانہوں نے اس اَمرپر سپیکراسدقیصر کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے انکامزیدکہناتھا کہ سپیکر نے اپنے خلاف لگائے گئے الزامات کو یکسر مسترد کرتے ہوئے اپنے اثاثہ جات کی الیکشن کمیشن میں ڈیکلریشن پر مبنی دلائل پیش کرکے کرپشن کے الزامات محض جھوٹ کاپلندا ثابت کرادیا ہے اور یہ بھی اعلان کیا ہے کہ اگر بنی گالہ میں الزام شدہ پلاٹ اور اسکے اوپر تعمیر کرایا گیا بنگلہ کسی نے انکی ملکیت ثابت کردی تو وہ بنگلہ اسے ہی بخش دیا جائیگا اور جو پلاٹ بنی گالہ میں سپیکر نے اپنی ملکیت ڈیکلیئربھی کرایا ہے تووہ انکی 2009 کی خرید ہے جبکہ سپیکر صوبائی اسمبلی2013 کے انتخابات میں پہلی بارمنتخب ہوکربن گئے ہیں سہیل خان کا یہ بھی کہنا تھا کہ اسدقیصر سے پہلے سپیکرصوبائی اسمبلی کے منصب پرفائز رہنے والے بیشترسپیکرز کی شان وشوکت،عیاشیاں اوراسراف بھی قوم بھولے نہیں ہیں کہ وہ کیسے قومی دولت بے رحمی سے لٹارہے تھے جبکہ اسدقیصر کی موجودگی میں سپیکرہاؤس میں دودھ کی چائے کے بجائے قہوہ ہی پینے کو ملتا ہے جبکہ ایک ایسے قناعت پسنداورملنگ ٹائپ سپیکرکی کردار کشی کرکے انہیں بدعنوانیوں کا مورد الزام ٹہرانے کی ناکام کوشش کرنے والا صرف اسد قیصر اورانکے خاندان کا ہی نہیں بلکہ پوری قوم اور خیبرپختونخوا کا دشمن ہی ہوسکتا ہے انہوں نے یہ بھی اعلان کیا ہے کہ جب بھی سپیکراسدقیصر پرکوئی بھی کرپشن ثابت ہوئی تو سب سے پہلے ہم اپنے اپنے عہدوں سے مستعفی ہوکر سیاست کو بھی خیرباد کہیں گے اس موقع پر انہوں نے ہفتہ کے روز موٹروے انبار انٹر چینج پر سپیکر اسد قیصرکاشاندار استقبال کرنے کا بھی اعلان کیا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...