سندھ، سپریم کورٹ نے چیف انجینئر محمد علی میمن کی تقرری غیر قانونی قرار دیدی

سندھ، سپریم کورٹ نے چیف انجینئر محمد علی میمن کی تقرری غیر قانونی قرار دیدی

کراچی (این این آئی)سپریم کورٹ نے تھر کول اتھارٹی میں خلاف قانون بھرتیوں سے متعلق تفصیلی فیصلہ جاری کردیا ہے ۔فیصلے میں تمام منصوبے متعلقہ محکموں کو منتقل کرنے کا حکم دیا گیا ہے ۔تفصیلی فیصلے کے مطابق اتھارٹی پانی کی فراہمی، سڑکوں کی تعمیر اور ائیر پورٹ بنانے کے علاوہ دیگر منصوبوں پر کام کر رہی تھیْ عدالت نے فیصلے میں اتھارٹی کے منصوبوں میں مبینہ بے ضابطگیوں پر چیف سیکرٹری سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔عدالت کا فیصلے میں کہنا تھا کہ سابق ڈی جی سندھ تھرکول اتھارٹی دانس سعید دس سال کے عرصہ میں سیکرٹری کے عہدے پر کیسے پہنچ گئے۔ دانش سعید کی تقرری اور ترقی سے متعلق محکمہ سروسز سے رپورٹ جمع کرائے ۔عدالت عظمیٰ چیف انجینئر محمد علی میمن کی تقرری بعد از ریٹائرمنٹ غیر قانونی قرار دیدی۔ْ عدالت نے تھرکول اتھارٹی کو کوئلے کی تلاش پروسیسنگ اور کان کنی کے علاوہ تمام منصوبے بند کرنے کا حکم دیا۔ تمام منصوبے متعلقہ محکموں کو بھی منتقل کرنے کا حکم دے دیا ہے۔ واضح رہے سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں جسٹس امیر ہانی مسلم پر مشتمل تین رکنی بینچ نے تھرکول اتھارٹی میں خلاف قانون بھرتیوں سے متعلق درخواست پر سماعت کی تھی۔

مزید : ملتان صفحہ اول


loading...