کرونا وائرس سے بچاؤ کیلئے ججز کو اہم مقدمات کی سماعت کا حکم وکلاء پر بھی پابندیاں مراسلہ روانہ

کرونا وائرس سے بچاؤ کیلئے ججز کو اہم مقدمات کی سماعت کا حکم وکلاء پر بھی ...

  



ملتان (کورٹ رپورٹر)کورونا وائرس کے خدشہ کے پیش نظر لاہور ہائیکورٹ نے ضلعی عدالتوں میں ججز کو اہم مقدمات کی سماعت کا حکم دیا ہے۔ ضلعی عدلیہ میں تعطیلات کا آغاز گزشتہ روز سے ہوگیا جو 6 اپریل تک جاری رہے گا۔ اس ضمن میں سیشن جج ملتان (بقیہ نمبر8صفحہ12پر)

کی جانب سے جاری نوٹیفیکیشن کے مطابق سپیشل جوڈیشل مجسٹریٹ محسن نثار گزشتہ روز سے 28 مارچ تک،مسعود احمد 29 مارچ سے 2 اپریل تک اور احمد ندیم ہاشمی 3 اپریل سے 6 اپریل تک، مقدمات کی سماعت کریں گے۔ گزشتہ روز سے 27 مارچ تک جوڈیشل مجسٹریٹس عمر بشیر، خاور علی شاہ اور شہزاد باسط، 28 مارچ اور 30 مارچ سے یکم اپریل کو شکیل احمد، جواد ظفر اور عمران خان لودھی، 2 سے 4 اپریل اور 6 اپریل کو محمد مدثر نواز، صداقت علی خان اور اعجاز محمود ضمانت بعد از گرفتاری اور ریمانڈ پر سماعت کریں گے۔ جبکہ آج 25 مارچ کو مسرور عاشق، 26 کو حافظ محمد زبیر، 27 کو مسعود احمد، 28 کو مبارک علی، 30 مارچ کو شیر باز خان، 31 کو ساجد محمود، یکم اپریل کو محمد احمد قادری، دو اپریل کو رانا محمد سہیل ریاض، 3 اپریل کو بشیر احمد، 4 اپریل کو ریاض احمد، 6 اپریل کو غلام اصغر رضوی سول کیسز پر سماعت کریں گے۔ جبکہ ایڈیشنل سیشن ججز محمد نواز بھٹی، محمد بلال بیگ، اختر حسین کلیار اور چوہدری محمد آصف نے گزشتہ روز بھی فرائض انجام دیے اور آج 25 مارچ کو بھی ڈیوٹی کریں گے۔ جبکہ 26 سے 27 مارچ کو خضر حیات سہو اور شمشاد علی رانا، 28 سے 30 مارچ کو ذولفقار احمد نعیم اور سجاد حسین خان، 31 مارچ سے یکم اپریل محمد عاصم اور حسن احمد، 2 سے 3 اپریل خورشید احمد انجم اور کاشف قیوم جبکہ 4 اپریل اور 6 اپریل کو سید جہانگیر علی اور عمران شفیع خان ہراسمنٹ، اندراج مقدمہ، عبوری اور بعد از گرفتاری ضمانت، حبس بے جا پر سماعت کریں گے۔کورونا کے خدشے بارے پنجاب بار کا بھی اہم فیصلہ سامنے آیاہے، وکلا کو اہم نوعیت کے کیسز کے علاوہ کچہری میں داخل نہ ہونے کی ہدایات جاری کر دی گئیں،ارجنٹ نوعیت کے کیسز کے لئے کچہری میں آنے والے وکلاء پر بار ہال میں بیٹھنے پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔صدر ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن عمران رشید سلہری نے کہا ہے کہ وکلاء گھروں میں رہیں،ارجنٹ کیسز میں پیش ہونے والے تمام احتیاطی تدابیر کو فالو کریں، سینئرز وکلاء، ایسوسی ایٹس، جونیئرز اور کلرکس حضرات کو ارجنٹ کیسز میں ساتھ نہ لائیں۔ پنجاب بار کے فیصلے کے بعد ڈسٹرکٹ بار ایسوسی ایشن ملتان نے مراسلہ بھی جاری کردیا ہے۔ جس میں 14 دن کے لاک ڈاؤن کو مدنظر رکھا گیا ہے۔لاہور ہائیکورٹ کے احکامات پر عملدرآمد کرتے ہوئے سیشن جج ملتان نے ضلعی عدلیہ کے ججز کو ڈیوٹیاں سونپ دی ہیں۔جبکہ چھٹیوں پر بھیجے گئے ججز کو حکم دیا ہے کہ چھٹیوں کے دوران شہر سے باہر مت جائیں۔اس ضمن میں ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج ملتان کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق گزشتہ روز سے 6 اپریل تک ضلعی عدالتوں میں ڈیوٹی ججز فرائض انجام دیں گے جس میں ایک ایک سپیشل جوڈیشل مجسٹریٹ، سول جج،جوڈیشل مجسٹریٹ اور ایڈیشنل سیشن ججز روزانہ کی بنیاد پر اہم نوعیت کے مقدمات کی سماعت کے لیے موجود ہوں گے جس میں ضمانتیں اور ریمانڈ سمیت دیگر شامل ہیں۔ ججز کو ہدایت کی گئی ہے کہ صبح 10 بجے تک کیسز کی سماعت مکمل کرلیں جبکہ عدم پیروی کی بنیاد پر کوئی کیس خارج نہ کیا جائے۔ جوڈیشل افسران کو یہ بھی ہدایت دی گئی ہے کہ اپنی عدالت سے کسی ماہر اہلکار کو مقرر کریں جو کیس کی آئندہ سماعت سے متعلق لسٹ عدالت کے باہر 10 بجے تک آویزاں کردے۔جبکہکرونا وائرس کا خدشہ،چودہ دنوں کے لاک ڈوان میں عدالتوں میں بھی کام کی نوعیت کو تبدیل کردیا گیا ہے۔ چودہ دنوں کے لاک ڈاؤن کے دوران عدالتوں میں صرف اہم نوعیت کے کیسز کی سماعت ہوگی۔ ڈیوٹی ججز چھٹیوں کی طرز پر ہی کیسز کی سماعت کریں گے۔عدالتوں میں ججز چیمبرز ورک کریں گے۔درخواست ضمانت، ہراسمنٹ کی درخواست، اندراج مقدمات سمیت صرف ضروری نوعیت کے کیسز کی سماعت ہوگی۔ پنجاب کے سول ججز اور مجسٹریٹس ضمانت، ریمانڈ سے متعلق کیسز کی سماعت کریں گے۔ سائلین کو ارجنٹ نوعیت کے کیسز کے بعد فوری فارغ کیا جائے گا۔ عدالت عالیہ میں غیر متعلقہ وکلاء اور سائلین پر پابندی کا فیصلہ برقرار رریے گا۔پنجاب بھر میں خدمات سرانجام دینے والی خواتین ججز کو ڈیوٹی سے استثنی دے دیا گیا ہے۔کوئی بھی کیس عدم پیروی پر خارج نہیں کیا جائے گا۔ پنجاب بھر میں خواتین عدالتی ملازمین کو بھی حاضری سے استثنی دے دیا گیا۔ پنجاب بھر کی عدالتوں میں کوئی غیر متعلقہ شخص داخل نہیں ہوگا۔سائل بھی صرف شدید ضروری حالت میں داخل ہوسکے گا۔جوڈیشل ریمانڈ کے قیدیوں کے ریمانڈ سے متعلق مجسٹریٹ جیل کا دورہ کرکے فیصلہ کریں گے۔ پنجاب کی عدالتوں میں تمام عملہ ماسک پہنے گا۔لاہور ہائیکورٹ اور بنچز میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے پیش نظر صرف ارجنٹ مقدمات، ضمانت بعداز گرفتاری، سسپنشن، حبس بے جا اور چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کی خصوصی اجازت کے تحت دیگر ضروری نوعیت کے مقدمات کی سماعت ہوسکے گی جبکہ جلد سماعت کی کوئی بھی درخواست قابل سماعت نہیں ہوگی۔ مذکورہ احکامات بارے رجسٹرار لاہور ہائیکورٹ بہادر علی خان اور ایڈیشنل رجسٹرار جوڈیشل سید شبیر حسین شاہ نے نوٹیفکیشن جاری کیا ہے۔

پابندیاں

مزید : ملتان صفحہ آخر