کورونا کے معاشی اثرات، پنجاب سٹیئرنگ کمیٹی نے سفارشات مرتب کرلیں

کورونا کے معاشی اثرات، پنجاب سٹیئرنگ کمیٹی نے سفارشات مرتب کرلیں
 کورونا کے معاشی اثرات، پنجاب سٹیئرنگ کمیٹی نے سفارشات مرتب کرلیں

  



لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن) پنجاب میں کورونا وائرس کے معاشی اثرات کے جائزے کیلئے تشکیل دی گئی سٹیئرنگ کمیٹی نے سفارشات مرتب کرلی ہیں۔

ذرائع پنجاب حکومت کے مطابق سٹیئرنگ کمیٹی نے تخمینہ لگایا ہے کہ انسداد کورونا کے لئے اگلے 12 ماہ میں 83 ارب روپے کی ضرورت ہوگی۔سٹیئرنگ کمیٹی کے مطابق پنجاب حکومت کو پہلے 3 ماہ میں 18 اعشاریہ 88 ارب کے فنڈز درکارہوں گے۔ مذکورہ فنڈز میں سے 7 اعشاریہ 59 ارب مرضوں کی تشخیص کیلئے خرچ ہوں گے۔سٹیئرنگ کمیٹی کے تخمینے کے مطابق حفاظتی سامان کیلئے 16 کروڑ 10 لاکھ اور کلینیکل مینجمنٹ کیلئے 5 اعشاریہ 67 ارب درکارہوں گے۔ ہسپتالوں میں حفاظتی سامان کی فراہمی کیلئے ایک اعشاریہ 68 ارب روپے درکارہوں گے۔تخمینے کے مطابق 51 کروڑ 70 لاکھ روپے نگرانی اور اڑھائی ارب روپے محکمہ صحت کے ملازمین کومراعات دینے کیلئے درکارہوں گے۔ متفرق اخراجات کیلئے 75 کروڑ 60 لاکھ روپے درکارہوں گے۔

مزید : بزنس /علاقائی /پنجاب /لاہور /کورونا وائرس