کرونا کیس، فریق بننے کیلئے جوڈیشل ایکٹو ازم پینل کی درخواست مسترد

کرونا کیس، فریق بننے کیلئے جوڈیشل ایکٹو ازم پینل کی درخواست مسترد

  



لاہور (نامہ نگار خصوصی)چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مسٹر جسٹس محمدقاسم خان کی سربراہی میں قائم پانچ رکنی فل بنچ نے کرونا وائرس کیس میں فریق بننے کے لئے دائر جوڈیشل ایکٹو ازم پینل کی درخواست مسترد کرتے ہوئے قراردیا کہ ادارے اپنا کام کررہے ہیں،ملک ایمرجنسی میں ہے،ڈرامہ بازی بند کرنا ہوگی،اس طرح کی درخواستیں وقت ضائع کرتی ہیں،کیس کی سماعت شروع ہوئی تو جوڈیشل ایکٹو ازم پینل کے وکیل نے کہا کہ ریلوے سٹیشن اورایئرپورٹ پر سینی ٹائزر فراہم نہیں کئے جارہے،جس پر جسٹس عائشہ اے ملک نے کہا کہ آپ کے پاس توکوئی ڈیٹا نہیں، آپ اس کیس میں کیوں فریق بن رہے ہیں؟ مستند ڈیٹاکی بجائے میڈیا کی خبروں کوبنیادبنا کر درخواست دائر کردی گئی ہے،آپ کی درخواست میں آدھی آپ کی تعریف ہے اور باقی کچھ نہیں،چیف جسٹس نے کہا کہ ہمیں ڈرامے کی صورتحال سے باہر نکلنا ہوگا،اس طرح کی درخواستیں وقت ضائع کرتی ہیں،اداروں کو کام کرنے دیں یہ نہ ہو کہ ان کے افسرسارا دن یہاں بیٹھے رہیں۔کارروائی کے بعد عدالت نے جوڈیشل ایکٹو ازم پینل کی درخواست مسترد کردی۔

درخواست مسترد

مزید : صفحہ آخر