مسلم لیگ ن کا کرونا وائرس کی 10ہزار حفاظتی کٹس دینے کا اعلان، مشکل صورتحال میں حکوت کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں: شہباز شریف

مسلم لیگ ن کا کرونا وائرس کی 10ہزار حفاظتی کٹس دینے کا اعلان، مشکل صورتحال ...

  



لاہور(جنرل رپورٹر،آئی این پی) قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر شہباز شر یف نے(ن) لیگ کی جانب سے کرونا ٹیسٹ کی10ہزار حفاظتی کٹس دینے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہمیں جنگی بنیادوں پر میڈیکل آلات منگوانے ہوں گے،ڈاکٹروں اورنرسوں کیلئے سیفٹی آلات منگوائے جائیں‘،حکومت کا فرض ہے مائی باپ بن کر غریبوں کو سروں پر ہاتھ رکھے،حکومت کی ذمہ داری ہے کہ عام آدمی کو ریلیف فراہم کرے،حکومت فوری طور پر ایک پلان مرتب کرے اس قوم نے زلزلوں اور سیلاب سے مقابلہ کیا اس وبا کا بھی مقابلہ کریں گے،اس مشکل صورتحال میں حکومت کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے صحافیوں سے ویڈ یو لنک پریس کانفرنس کے ذریعے کیا۔شہبا زشر یف نے کہا کہعام آدمی کیلئے کرونا ٹیسٹ مفت کئے جائیں، شرح سود کو کم کر دیا جائے، وائرس کے خاتمے تک دیہاڑی دار افراد کو وظیفہ دیا جائے، حکومت تیل کی قیمتوں میں 70 سے 80 روپے کم کرے۔شہباز شریف نے کہا ہمیں اپنے پاس موجود وسائل کو استعمال کرنا ہوگا، بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کی امدادی رقم میں اضافہ کیا جائے، مجھے یقین ہے انشااللہ ہم اس بحران سے نکل آئیں گے، ای او بی آئی کے فنڈز کو بھی امدادی کاموں میں استعمال کیا جاسکتا ہے۔قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف نے کہا کہ انسانیت کا تقاضا ہے کہ اس معاملے میں سیاست کو نہ لایا جائے،ہمیں حکومت کے اچھے اقدامات کی تعریف کرنی ہوگی،حکومت کی کمزوریوں پر بھی بات کرنا ہوگی۔انہوں نے کہا کہجو لوگ اللہ کو پیارے ہو گئے ہیں ہم سب ان کے خاندانوں کیساتھ ہیں،ہم وفات پانے والے افراد کے لواحقین کیلئے صبر و جمیل کی دعا کرتے ہیں،مجھے خبر ملی ہے کہ جیل میں بھی کرونا کا ایک مریض پایا گیا ہے،مجھے یقین ہے حکومت وقت بروقت اقدامات اٹھائے گی،ہمیں ایسی کوئی بات نہیں کرنی چاہیے جس سے معاشرہ تقسیم ہوانہوں نے کہا کہ میں اپنے بھائی کے علاج کیلئے لندن میں موجود تھا، نوازشریف نے مجھے کہا کہ پاکستان جاکراور اپنا کردارادا کرو،کرونا وائرس نے پوری دنیا کو لپیٹ میں لے لیا ہے،ڈاکٹراپنی جانوں پر کھیل کر مریضوں کا علاج معالجہ کر رہے ہیں،بدقسمتی سے ہماری معیشت بہت کمزور ہے،ہمارے معاشرے میں بدقسمتی سے تقسیم بھی ہے،وقت کا تقاضا یہ ہے کہ ہم اس چیلنج کو مل کر قبول کریں۔ہمیں اس وقت ایک قوم بننے کی ضرورت ہے،ہمیں مل کر آگے بڑھناہے اور مشکلات کا مقابلہ کرنا ہے،انسانیت کا تقاضا ہے کہ اس معاملے میں سیاست کو نہ لایا جائے،ہمیں حکومت کے اچھے اقدامات کی تعریف کرنی ہوگی،حکومت کی کمزوریوں پر بھی بات کرنا ہوگی،تفتان کے حوالے سے حکومت نے شدید غفلت کی۔برق رفتاری سے اقدامات ہوتے تو آج حالات اور ہوتے،قرنطینہ میں بھیڑ بکریوں کی طرح لوگوں کو رکھا گیا،اب ہمیں آگے بڑھنا ہے اور اس معاملے کو حل کرنا ہے،اس بیماری کا کوئی علاج سامنے نہیں آیا،اس بیماری کا صرف ایک علاج ہے،احتیاط،احتیاط،احتیاط،اپنے کارکنوں سے کہوں گاقانون نافذ کرنیوالے اداروں کی مدد کریں،وزیراعظم سے کہتا ہوں تمام پارٹیز کو ایک چھت کے نیچے اکٹھا کریں۔

شہبازشریف

مزید : صفحہ اول