نیسلے پاکستان کا ورلڈ واٹر ڈے کے موقع پر عزم کا اعادہ

نیسلے پاکستان کا ورلڈ واٹر ڈے کے موقع پر عزم کا اعادہ

  



لاہور(پ ر)نیسلے پاکستان نے پانی کے استعمال و انتظام اور مستقبل کی ضروریات کو پورا کرنے کیلئے بہترین طریقوں کی حوصلہ افزائی کیلئے اپنا کردار جاری رکھنے کے عزم کے ساتھ پانی کا عالمی دن منایا۔رواں سال پانی کے عالمی دن کا موضوع اس بات کو اجاگر کرتا ہے کہ کیسے پانی کے وسائل موسمیاتی تبدیلی سے منسلک ہیں۔وقار احمد، ہیڈ آف کارپوریٹ افیئرز، نیسلے پاکستان نے کہا”کیئرنگ فار واٹر(C4W) پاکستان اقدام کے ذریعے اور کلین گرین پاکستان مہم کا توثیق کنندہ ہونے کے ناطے نیسلے پاکستان ایسے مواقع کی مسلسل تلاش میں ہے جس کے ذریعے وہ معاشرے میں بہتری لاسکے“۔انہوں نے کہا ”C4W-Pakistan پروگرام نہ صرف مقامی سطح پر پانی کے بچاؤ اور تحفظ کیلئے واضح اور عام حکمت عملی کو وضع کرتا ہے بلکہ اس حوالے سے اجتماعی تعاون پر بھی توجہ مرکوز کرتا ہے کیونکہ ہمار یقین ہے کہ تعاون مشترکہ وسائل کو مستقبل کے لئے محفوظ بنانے کیلئے کلیدی حیثیت رکھتا ہے۔انہوں نے کہا”C4W-Pakistanپروگرام کے تحت ہم محکمہ زراعت پنجاب ، ادارہ برائے پائیدار ترقی پالیسی (SDPI)، پاکستان ایگریکلچر ریسرچ کونسل (PARC)، مینگو ریسرچ انسٹی ٹیوٹ(MRI)، ڈبلیو ڈبلیو ایف، لمس جیسے شراکت داروں کے ساتھ کام کررہے ہیں۔“C4W-Pakistan اقوام متحدہ کے SDG-6کے حوالے سے ہمارے کردار کیلئے ہماری کوششوں میں رہنمائی فراہم کرتا ہے۔

نیسلے پاکستان رواں سال کے اختتام تک پاکستان میں اپنی تمام آپریشنل سائیٹس کیلئے الائنس فار واٹر سٹیوارڈشپ (AWS) سرٹیفکیشن کے حصول کا ارادہ رکھتا ہے۔ نیسلے پاکستان پانی کے ضیاع کی روک تھام کو یقینی بنانے کیلئے پانی کے اپنے سالانہ استعمال کو نہ صرف کم کرنے بلکہ پانی کے دوبارہ استعمال کے نئے طریقوں کی تلاش میں قائدانہ کردار ادا کررہا ہے۔نیسلے پاکستان نے محکمہ زراعت، حکومت پنجاب کے ساتھ شراکت داری قائم کی ہے تاکہ مقامی کسانوں کی ڈریپ ایرگیشن نصب کرنے کی حوصلہ کی جائے۔ نیسلے پاکستان نے اب تک 139 ایکڑ اراضی پر ڈریپ سسٹم نصب کیا ہے جس سے اندازاً سالانہ 391 ملین لیٹرز پانی کی بچت ہوگی۔

مزید : کامرس