احتیاطی تدابیر پر عمل کرنا ہر شہری پر فرض ہے، مولانا سلفی

احتیاطی تدابیر پر عمل کرنا ہر شہری پر فرض ہے، مولانا سلفی

  



کراچی(پ ر) امیر جماعت غرباء اہلحدیث پاکستان مولانا عبدالرحمن سلفی نے مرکزی مجلس شوری، آئمہ کرام اور جماعت کے میڈیا کوآرڈینیٹر عبدالرحمن راجپوت سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کی طرف سے احتیاطی تدابیر پر عمل کرنا ہر شہری پر فرض ہے لیکن ریاستی اقدامات کے ذریعے عوام میں خو ف و ہراس پھیلانا شرعاً جائز اور درست نہیں ہے، انہو ں نے کہا کہ کراچی کے باشعور شہری سخاوت کرنے میں بازی لے گئے، روزانہ دیہاڑی لگانے والے لاکھوں مزدور حکومتی اداروں اور فلاحی تنظیموں کے منتظر ہیں۔ مولانا سلفی نے کہا کہ کراچی میں 71لاکھ سے زائد مزدوروں کو حکومت کی طرف سے دی گئی صرف 3000/- کی رقم بہت کم ہے انہیں کم ازکم پاکستان کے لیبر لاء کے تحت 7000/- روپے نقد اور مکمل راشن پیکج حکومتی سطح پر نہایت مربوط اور منظم انداز سے ان کے گھروں پر پہنچایا جائے تاکہ ان کی اور ان کے اہلخانہ کی عزت نفس مجروح نہ ہو۔ نائب امیر نے کہا کہ روزانہ اجرت پر کام کرنے والوں کے علاوہ بیواؤں، یتامیٰ، سفید پوش بزرگ شہری اور کورونا وائرس میں مبتلا مریضوں کے لواحقین کو بھی ان کی دہلیز پر راشن پیکج پہنچانا ریاست کی اہم ترین ذمہ داری ہے۔ موجودہ حالات کے پیش نظر عبدالرحمن سلفی اور محمد سلفی نے اہل کراچی کے اہل ثروت اور مخیر حضرات سے اپیل کی ہے کہ وہ جماعت کے فلاحی کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں تاکہ سسکتی اور تڑپتی انسانیت آپ کے دیئے گئے عطیات اور راشن پیکج مستحقین میں تقسیم کیے جاسکیں۔ مولانا سلفی نے کہا کہ صدقہ دینے والا ہر شخص قیامت کے دن اپنے صدقے کے سائے تلے ہوگا جب تک لوگوں کے درمیان فیصلہ نہ ہوگا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر