اسلام آباد ہائیکورٹ کامنشیات کیسز میں انڈر ٹرائل 110 قیدیوں کی مشروط رہائی کا حکم

اسلام آباد ہائیکورٹ کامنشیات کیسز میں انڈر ٹرائل 110 قیدیوں کی مشروط رہائی کا ...
اسلام آباد ہائیکورٹ کامنشیات کیسز میں انڈر ٹرائل 110 قیدیوں کی مشروط رہائی کا حکم

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آباد ہائیکورٹ نے منشیات کیسز میں انڈر ٹرائل 110 قیدیوں کی مشروط رہائی کا حکم دیدیا، عدالت نے کہاہے کہ کم عمر بچوں،خواتین اور55 سال سے زائد عمر کے قیدیوں کی رہائی میں غیر ضروری رکاوٹ نہ ڈالی جائے۔

اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے چھ صفحات پر مشتمل تحریری حکم جاری کیا،حکم نامہ میں کہاگیا ہے کہ ڈی جی اے این ایف کمیٹی تشکیل دیں جو قیدیوں کی رہائی کے عمل کی سکروٹنی کرے،اے این ایف کمیٹی تین روزمیں قیدیوں کی رہائی کے حوالے سے کام مکمل کرے۔

اسلام آبادہائیکورٹ نے کہاکہ ایسے قیدی جن کی ضمانت مسترد ہوچکی وہ بھی کورونا وائرس کے باعث ضمانت کے مستحق ہیں،قیدیوں کی رہائی کیلئے شورٹی بانڈ یا سیکیورٹی سے متعلق کمیٹی کا مطمئن ہونا ضروری ہے۔

عدالت نے کہاکہ کمیٹی کسی قیدی کی رہائی کے حوالے سے مطمئن نہ ہو تو اس کی وجوہات تحریرکرے،رہائی کی صورت میں قیدی کوجیل سے مکمل سکریننگ کے بعد نکالا جائے گا،حکم نامے میں مزید کہاگیا کہ کورونا وائرس کے پیش نظر حکومتی فیصلوں کو مدنظر رکھ کر قیدیوں کی رہائی کاحکم دیا،اڈیالہ جیل میں گنجائش سے زائد قیدیوں کی وجہ سے بھی یہ حکم جاری کیا۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد