بجلی بحران کی ذمہ داری وزارت پانی و بجلی کی بدانتظامی ہے، مئی میں بجلی پر سبسڈی کیلئے 37 ارب روپے جاری کئے جا رہے ہیں: وزارت خزانہ

بجلی بحران کی ذمہ داری وزارت پانی و بجلی کی بدانتظامی ہے، مئی میں بجلی پر ...
بجلی بحران کی ذمہ داری وزارت پانی و بجلی کی بدانتظامی ہے، مئی میں بجلی پر سبسڈی کیلئے 37 ارب روپے جاری کئے جا رہے ہیں: وزارت خزانہ

  



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وزارت خزانہ نے کہا ہے کہ بجلی بحران کی ذمہ دار وزارت پانی و بجلی کی بدانتظامی ہے جس نے وصولیوں کی بہتری کے بجائے اربوں روپے کی سبسڈی پر انحصار کر لیا ہے۔ وزارت خزانہ کے حکام کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نے ایک دن میں 22 ارب روپے جاری کرنے کا نہیں کہا تھا بلکہ یہ رقم 30 مئی تک جاری ہونا ہے جبکہ آنکھ بند کر کے رقم جاری نہیں کی جا سکتی۔ ذرائع کے مطابق وزارت خزانہ کے حکام کا کہنا ہے کہ مئی میں بجلی پر سبسڈی کی مد میں 37 ارب روپے جاری کئے جا رہے ہیں جو ملکی تاریخ میں بجلی کی سبسڈی کیلئے سب سے بڑی رقم ہے۔ وزارت پانی و بجلی نے وصولیوں میں بہتری لانے کے بجائے اربوں روپے کی سبسڈی پر انحصار کر لیا ہے جبکہ بجلی کی پیداوار سے متعلق بھی کوئی اقدامات نہیں کئے گئے۔ وزارت پانی و بجلی نے نہ تو چھ روپے یونٹ بجلی پیدا کرنے والے لبرٹی پلانٹس پر توجہ دی اور نہ ہی کوہ نور پاور پلانٹس چلانے کیلئے اقدامات کئے گئے۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں


loading...