کمسن بچوں کو کرایہ ایکٹ کے مقدمہ میں ہتھکڑیاں لگاکرپیش کرنے عدالت پر برہم،تفتیشی کی سرزنش،بچوں کو رہا کرنے کاحکم

کمسن بچوں کو کرایہ ایکٹ کے مقدمہ میں ہتھکڑیاں لگاکرپیش کرنے عدالت پر ...
کمسن بچوں کو کرایہ ایکٹ کے مقدمہ میں ہتھکڑیاں لگاکرپیش کرنے عدالت پر برہم،تفتیشی کی سرزنش،بچوں کو رہا کرنے کاحکم

  


لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)جوڈیشل مجسٹریٹ نے کم سن بچوں کو کرایہ داری ایکٹ کے مقدمہ میں ہتھکڑیاں لگاکرپیش کرنے پر تفتیشی افسر کی سرزنش کردی اور نابالغ بچوں کومقدمہ سے بری کرنے کا حکم دیدیا۔

تفصیلات کے مطابق تھانہ بھاٹی گیٹ پولیس نے کم سن بچوں کوکرایہ داری ایکٹ کے مقدمہ میں ہتھکڑیاں لگاکرجوڈیشل مجسٹریٹ کے روبروپیش کیا ،عدالت نے بچوں کوہتھکڑیاں لگانے پرتفتیشی افسرکی سرزنش کردی،عدالت نے استفسار کیا کہ کس قانون کے تحت بچوں کو ہتھکڑی لگائی؟کیاتم لوگوں نے پولیس رولزنہیں پڑھے؟وکیل نے کہا کہ بچے کرایہ دارہیں نہ مالک مکان،پولیس نے پھربھی ہتھکڑی لگائی،پولیس نے قانون کی خلاف ورزی کی،وکیل نے استدعا کی کہ عدالت نابالغ بچوں کوبری کرنے کاحکم دے،عدالت نے نابالغ بچوں کومقدمہ سے بری کرنے کا حکم دے دیا،عدالت نے دونوں بچوں کی ہتھکڑیاں کھلواکرمقدمہ خارج کردیا ۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور