خاتون ماڈل سڑک پر سرعام برہنہ فوٹوشوٹ کروانے لگی تو لوگوں کو غصہ چڑھ گیا اور۔۔۔

خاتون ماڈل سڑک پر سرعام برہنہ فوٹوشوٹ کروانے لگی تو لوگوں کو غصہ چڑھ گیا ...
خاتون ماڈل سڑک پر سرعام برہنہ فوٹوشوٹ کروانے لگی تو لوگوں کو غصہ چڑھ گیا اور۔۔۔

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ کے شہر نیویارک میں ایک خاتون نے کھلے عام کپڑے اتار دیئے اور برہنہ ہو کر فوٹوشوٹ کروانا شروع کر دیا جس پر مقامی لوگ شدید مشتعل ہو گئے۔ ڈیلی سٹار کے مطابق یہ مریسا پیپن نامی خاتون پیشے کے اعتبار سے ماڈل تھی اور بیلجیم کی شہری تھی جس نے بروکلین کا علاقے ویلیمز برگ میں برہنہ فوٹوشوٹ کروانے کی کوشش کی جہاں یہودی اکثریت میں رہتے ہیں اور وہاں برہنگی ممنوع خیال کی جاتی ہے۔ مقامی یہودی ایسی کوئی حرکت اپنے علاقے میں برداشت نہیں کرتے۔

رپورٹ کے مطابق مریسا پیپن کی یہ حرکت دیکھ کر لوگ اس قدر غصے میں آ گئے کہ اس پر چیخنے چلانے لگے اور چند ایک تو اسے مارنے کو بھی دوڑ پڑے۔ مریسا کا کہنا تھا کہ ”ایک شخص نے دور سے مجھ موبائل فون دے مارا۔ وہ میری طرف نہیں دیکھ رہا تھا اور اندازے سے فون پھینکا تھا چنانچہ وہ مجھے لگنے کی بجائے دور جا گرا اور ٹوٹ گیا۔ ان لوگوں نے پولیس کو بھی کال کر دی تھی۔ میں اوبر کی ٹیکسی پر وہاں گئی تھی اور جب پولیس کی گاڑیوں کے سائرن بجنے شروع ہوئے تو میرے اوبر ڈرائیور نے بھی چیخنا شروع کر دیا کہ جلدی کرو، یہاں سے نکل چلیں۔“ واضح رہے کہ اس جگہ پر قریب ہی یہودیوں کی عبادت گاہ بھی تھی، جہاں اس عورت نے یہ قبیح حرکت کی۔

مزید : ڈیلی بائیٹس