پی آئی اے کے تباہ ہونے والے طیارے کے پائلٹ سجاد گل کے اہل خانہ آج شام کیا کرنے جارہے ہیں ؟ بڑی خبر آ گئی

پی آئی اے کے تباہ ہونے والے طیارے کے پائلٹ سجاد گل کے اہل خانہ آج شام کیا کرنے ...
پی آئی اے کے تباہ ہونے والے طیارے کے پائلٹ سجاد گل کے اہل خانہ آج شام کیا کرنے جارہے ہیں ؟ بڑی خبر آ گئی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )عید سے ایک روز قبل لاہور سے کراچی جانے والے پی آئی اے کا طیارہ حادثے کا شکار ہو گیا جس میں سوار 97 افراد جاں بحق ہو گئے جبکہ دو معجزةمحفوظ رہے تاہم اب اس کے پائلٹ کے حوالے سے اہم ترین خبر آ گئی ہے ۔

تفصیلات کے مطابق پی آئی اے کی بدقسمت فلائٹ پی کے 8303 کو کیپٹن سجاد گل اڑا رہے تھے جبکہ ان کے ساتھ فرسٹ آفیسر عثمان اعظم تھے ، دونوں ہی اس حادثے میں جان کی بازی ہار گئے ہیں ۔

اب خبر موصول ہو رہی ہے کہ طیارہ اڑانے والے پائلٹ کیپٹن سجاد گل کے اہل خانہ آج شام 6 بجے اپنی لاہور میں واقع رہائشگاہ پر پریس کانفرنس کریں گے جبکہ اس موقع پر کیپٹن سجاد کی رہائشگاہ پر پالپا کی ٹیم بھی موجود ہو گی ۔

یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ ابتدائی تحقیقات میں طیارے حادثے کا مبینہ طور پر ذمہ دار پائلٹ کو قرار دیا جارہاہے کہ انہوں نے لینڈنگ گیئر نہیں کھولے اور کنٹرول ٹاور سے ملنے والی ہدایات پر عین عمل نہیں کیا تاہم ابھی مزید تحقیقات جاری ہیں اور تمام ممکنات پر تفصیلی غور کیا جارہاہے ۔

ذرائع کا کہناہے کہ کیپٹن سجاد گل کے اہل خانہ بھی پائلٹ کی مبینہ غلطی پر بات کریں گے اور ہو سکتا ہے کہ وہ تحقیقات پر اپنے تحفظات کا اظہار کر بھی کریں ۔یاد رہے کہ طیارہ حادثہ میں بچ جانے والے دو مسافروں نے بتایا ہے کہ پائلٹ نے ایک مرتبہ لینڈنگ کی کوشش کی تھی تاہم اس نے پھر سے طیارہ واپس ہوا میں اٹھا لیا تھا ۔

تحقیقاتی ٹیم نے جائے حادثہ اور رن وے کا آج بھی دورہ کیا جس دوران بیلی لینڈنگ کیلئے کی جانے والی کوشش سے متعلق شواہد بھی اکھٹے کیے جبکہ اس کی ویڈیو بھی سامنے آ گئی ہے جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ لینڈنگ کے بعد جہاز کے دونوں انجن رن وے سے ٹکرائے اور رگڑ کھاتے چلے گئے ۔

پائلٹ نے طیارہ کنٹرول میں نہ ہونے کی وجہ سے اسے واپس ہوا میں اٹھا لیا اورمزید ایک چکر لگانے کے بعد جب وہ دوبارہ لینڈنگ کرنے کیلئے آیا تو رن وے سے تقریبا پانچ کلومیٹر پیچھے ہی حادثے کا شکار ہو گیا ۔

مزید :

قومی -