بچے کو قبض کی شکایت، ہسپتال میں ایسی بیماری کی تشخیص کہ پیروں تلے زمین نکل گئی

بچے کو قبض کی شکایت، ہسپتال میں ایسی بیماری کی تشخیص کہ پیروں تلے زمین نکل گئی
بچے کو قبض کی شکایت، ہسپتال میں ایسی بیماری کی تشخیص کہ پیروں تلے زمین نکل گئی
سورس: File

  

لندن (ڈیلی پاکستان آن لائن) ایک آٹھ سالہ لڑکے کو قبض کی شکایت کے بعد کینسر کی تشخیص ہوئی۔ لنکن شائر کی رہائشی وکٹوریہ سٹینٹن نے اپنے بیٹے ہیریسن کو سانس لینے میں دشواری کا سامنا کرنے کے بعد ہسپتال پہنچایا اور دعویٰ کیا کہ ابتدائی طور پر ڈاکٹروں کا خیال تھا کہ اس کی علامات قبض کی وجہ سے ہیں۔ تاہم انڈیپنڈنٹ کی ایک رپورٹ کے مطابق سینے کے ایکسرے سے یہ بات سامنے آئی کہ اس کے پھیپھڑے سیال سے بھر گئے ہیں۔

خاتون کے مطابق آٹھ سالہ بچے کو قبض کی شکایت کے بعد ڈاکٹر نے ابتدائی طور پر جلاب تجویز کیا۔ تاہم یہ اس کے لیے کام نہیں کرسکا اور اس نے ماں  کو تشویش میں مبتلا کردیا۔ "ایک دن کے بعد بھی کوئی بہتری نہیں آئی اور میں نے دیکھا کہ اس کی سانسیں اکھڑ رہی تھیں اور وہ معمول کی طرح تیز چلنے کے قابل نہیں تھا اور یقینی طور پر معمول کے مطابق نہیں تھا۔" 

بعد میں ایک اور ہسپتال میں بچے کے مزید ٹیسٹوں سے اس میں کینسر کی تشخیص ہوئی. 

مزید :

ڈیلی بائیٹس -