ڈیرہ اسماعیل خان میں ماتمی جلوس میں دھماکہ، سات افراد جاں بحق،100سے زائدزخمی

ڈیرہ اسماعیل خان میں ماتمی جلوس میں دھماکہ، سات افراد جاں بحق،100سے زائدزخمی
ڈیرہ اسماعیل خان میں ماتمی جلوس میں دھماکہ، سات افراد جاں بحق،100سے زائدزخمی

  

ڈیر ہ اسماعیل خان (مانیٹرنگ ڈیسک) سخت سیکیورٹی میں نواحی علاقے چوغلہ سے آنے والے مرکزی اور آخری ماتمی جلوس کے قریب کمشنری بازارکی ایک دکان میں نصب بارودی مواد کے دھماکے سے ایک بچے سمیت سات افراد جاں بحق اورسیکیورٹی اہلکاروں سمیت100سے زائد عزا دار زخمی ہوگئے ہیں جن میں سے 90کو ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر، 14سی ایم ایچ اور پانچ زخمیوں کو ملتان منتقل کردیاگیاہے۔طالبان نے حملے کی ذمہ داری قبول کرلی ۔ہسپتال میں ادویات اور پانی کی قلت پیدا ہوگئی ہے جبکہ دھماکے کے بعد فوج نے شہر کا کنٹرول سنبھال لیا ۔ڈاکٹروں کے مطابق بعض زخمیوں کی حالت تشویشناک ہے ۔صوبائی وزیراطلاعات میاں افتخار حسین نے پانچ شہداءاور 70زخمیوں کی تصدیق کردی تاہم نجی چینل کے مطابق سات افراد جاں بحق اور135سے زائد زخمی ہوئے ۔وفاقی وزیرداخلہ رحمان ملک نے دھماکے کا نوٹس لیتے ہوئے سیکیورٹی فورسز کی موجودگی میں بم دھماکے اور بارودی مواد کی تنصیب کی تحقیقات کا حکم دیتے ہوئے دکان کے مالک کو حراست میں لینے کا حکم دیدیا۔اُدھر دھماکے سے بارہ سے زائد دکانیں تباہ ہوگئی ہیں اور بم سائیکل کی دکان میں نصب تھاجسے ریموٹ کنٹرول کے ذریعے اُڑادیاگیا۔ دھماکے کے بعد لوگوں کو منتشر کرنے کے لیے پولیس نے ہوائی فائرنگ کی جس کے بعد جلوس مختلف حصوں میں بٹ گیا ۔ورثاءکا کہناہے کہ دھماکوں کے بعد موبائل فون کی بندش بلاجواز ہے ، اُنہیں اپنے پیاروں کی حالت جاننے میں مشکلات کادرپیش ہیں ۔ سیکیورٹی کے سخت ترین انتظامات کیے گئے تھے ، بازاروں کے داخلی و خارجی راستوں کی بندش اور بھاری نفری کے ساتھ ساتھ دکانوں اور مکانوں کی چھتوں پر بھی پولیس اور دیگر سیکیورٹی فورسز کی نفری تعینات ہے ۔واضح رہے کہ گذشتہ روز بھی نواحی علاقے میں دھماکہ ہواتھاجس میں دوبھائیوں سمیت آٹھ عزادار شہید ہوگئے تھے ۔

مزید :

ڈیرہ اسماعیل خان -