مقبوضہ کشمیر: ہائی کورٹ نے چار نوجوانو ں پر لاگو کالا قانون کالعدم قرار دے دیا

مقبوضہ کشمیر: ہائی کورٹ نے چار نوجوانو ں پر لاگو کالا قانون کالعدم قرار دے دیا

سری نگر(اے پی پی) مقبوضہ کشمیرمیں ہائی کورٹ نے چار کشمیری نوجوانوںکی کالے قانون پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت غیر قانونی نظر بندی کالعدم قرار دیتے ہوئے قابض انتظامیہ کو انہیں فوری طور پر رہا کرنے کے احکامات دیے ہیں۔ کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق جسٹس بنسی لالبھٹ پر مشتمل سنگل بنچ نے نجیب احمد بٹ، ارشاد احمد ڈار، مختار احمد ڈار اور مظفر احمد وانی نامی نوجوانوں کے مقدمات کی سماعت کے بعدان کے خلاف پولیس کی طرف سے پیش کئے گئے شواہد کو ناکافی قرار دیتے ہوئے ا±ن پر عائد کالا قانون پبلک سیفٹی ایکٹ کالعدم قرار دیا ۔ نظر بند نوجوانوں کے مقدمات کی پیروی ایڈووکیٹ میر شفاقت نے کی جبکہ قابض انتظامیہ کی طرف سے سینئر ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل جے اے کاو ¾سہ اور اسسٹنٹ ایڈووکیٹ جنرل ایم اے چاشو نے عدالت میں دلائل دیے۔

مزید : عالمی منظر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...