30 نومبر کا احتجاج قانون کے دائرے میں ہونا چاہئے ، گورنر سرور

30 نومبر کا احتجاج قانون کے دائرے میں ہونا چاہئے ، گورنر سرور

                      لاہور( نمائندہ خصوصی)گورنر پنجاب چو دھر ی محمد سرور نے کہا ہے تمام مسائل کا واحد حل مذاکرات ہیں۔ تحریک انصاف کا 30نومبر کا احتجاج پُرامن اور قانون کے دائرے میں ہونا چاہئے۔ کسی کو قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دینی چاہئے۔ یہ بات انہوں نے میاں میر کالونی لاہور میں واٹر فلٹریشن پلانٹ کے افتتاح کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ گورنر پنجاب نے کہا کہ ملک انتہائی نازک دور سے گزر رہا ہے اس وقت ہمیں اجتمائی سوچ وفکر اور اتفاق و اتحاد کا مظاہرہ کرنا ہے اور اپنے ذاتی مفادات کو چھوڑ کر ہم سب کی مشترکہ جدوجہد اور کوشش صرف پاکستان کا مستقبل ہونا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ یہ لمحہ فکریہ ہے کہ پانی جیسی بنیادی ضرورت جو انسانوں کا حق ہے وہ بھی عام شہری کو مہیا نہیں جس کی وجہ سے متعدد جان لیوا بیماریاں پھیل رہی ہیں اور ہمارے معصوم بچے زیادہ تر اس کا شکار ہو رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ یہ بڑے افسوس کی بات ہے کہ سابقہ ادوار کی حکومتوں نے اس ضمن میں جوواٹر فلٹریشن پلانٹس لگائے وہ سب کے سب نمبر 2اور ناکارہ تھے اور اس گناﺅنے جرم میں جو لوگ ملوث تھے ۔ انہوں نے کہا کہ جنہوں نے ان نمبر2فلٹریشن پلانٹس سے کروڑوں ، اربوں روپے کمائے بڑے افسوس کا مقام ہے کہ ان لوگوں کے خلاف کوئی کاروائی عمل میں نہیں لائی گئی۔ انہوں نے مزید کہا کہ کرپشن ہر سطح پر سراہت کر چکی ہے اور اس کا خاتمہ نہ صرف معاشرے کی بھلائی کے لئے ضروری ہے بلکہ وقت کی بھی آواز ہے۔ انہوں نے کہا کہ کرپشن کے خاتمے کے بغیر ملک سے غربت ختم نہیں ہو سکتی ہمیں اس ناسور کو جڑ سے اکھاڑ باہر پھینکنا ہوگا تبھی ہم ایک خوشحال اور ترقی یافتہ معاشرہ تشکیل دے سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ خدمت انسانیت سے بڑھ کر کوئی نیکی نہیںاور یہ بڑی خوش آئند بات ہے کہ لوگ فلاحی کاموں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیتے ہیں۔

گورنر سرور

مزید : صفحہ آخر