تاجروں پر ایس آر اوکا نفا ذمعاشی قتل کے مترادف ہے ،نعیم میر

تاجروں پر ایس آر اوکا نفا ذمعاشی قتل کے مترادف ہے ،نعیم میر

 لاہور ( اسد اقبال ) فیڈرل بورڈ آف ریو نیو کی جانب سے آئی ایم ایف کے دباﺅ پر چھو ٹے تاجروں پر ایس آر او (608)کا نفا ذکر نا معاشی قتل کے مترادف ہے جس سے نہ صرف مہنگائی کا مزید بو جھ عوام پر پڑے گا بلکہ کاروباری سر گر میاں بھی معطل ہو جائینگی ۔تاجر برادری ایس آر او کو یکسر مستر د کرتی ہے اور اس کو غیر فعال بنا نے کے لیے انجمن تاجران کے پلیٹ فارم سے ملک بھر کے تاجروں کا کنو نشن 28نو مبر کو طلب کر لیا گیا ہے جس میں صوبائی ،ضلعی و تحصیل کی سطح پر تاجر رہنماءشر یک ہو کر حکومت اور ایف بی آر کے خلا ف سخت لائحہ عمل اپنائیںگے۔ان خیالا ت کا اظہارآ ل پاکستان انجمن تاجران کے مر کزی جنرل سیکر ٹری نعیم میر نے ”پاکستان “کوانٹرویو کے دوران کیا ۔ان کا کہنا تھا کہ ایف بی آر با لوا سطہ ٹیکسو ں کے نظام کو تقو یت دے رہی ہے جس سے ملک کی معاشی صورتحال ابتراور تاجروں میں تشو یش و غم وغصہ کی لہر دوڑ رہی ہے ۔نعیم میر نے کہا کہ ایسے تما م کمر شل میٹرز جن کا ماہانہ بل بیس ہزار روپے سے کم ہو گا ان پر 5فیصد اضافی سیلز ٹیکس لگایا جائے گا جبکہ پچاس ہزار روپے سے کم بل پر 7.5فیصد اضافی ٹیکس دینا ہو گا جبکہ ہر ماہ کی 15تاریخ تک اپنی ماہانہ سیاز ٹیکس ریٹرن جمع کروانا ہو گی علاوہ ازیں کم کاروباری حجم رکھنے والے چھو ٹے تاجروں پر بھی سیلز ٹیکس لازمی رجسٹر یشن کروانا ہو گی جو تاجروں کے لیے ممکن نہیں۔

مزید : علاقائی