برطانوی وزیر اعظم کی فرانسیسی صدر سے ملاقات

برطانوی وزیر اعظم کی فرانسیسی صدر سے ملاقات

  

پیرس/لندن(کے پی آئی)برطانوی وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون نے پیر کے دِن فرانس کو پیش کش کی کہ وہ شام میں داعش کے باغیوں کے خلاف فضائی حملوں کے لیے تیار ہے، جس کے لیے وہ اس ہفتے برطانوی پارلیمان سے منظوری لیں گے، تاکہ جہادیوں کے خلاف لڑائی میں شرکت کی جاسکے۔گزشتہ روز پیرس کے دورے کے دوران برطانوی رہنما نے فرانسیسی صدر، فرانسواں اولاں کو بتایا کہ دولت اسلامیہ کے خلاف فضائی حملوں کے لیے فرانسیسی لڑاکا طیارے قبرص کے برطانوی ایئربیس کو استعمال کر سکتے ہیں۔ ساتھ ہی، انھوں نے فضا ہی میں ایندھن بھرنے کی خدمات کی پیش کش سے استفادہ کر سکتے ہیں۔ کیمرون نے داعش کے مخفف کا استعمال کیا۔ بقول ان کے، میں صدر اولاں کے اقدام کی مکمل حمایت کرتا ہوں جنھوں نے شام میں داعش کے خلاف حملے شروع کیے، اور میں اس بات میں پرعزم ہوں کہ برطانیہ کو بھی ایسا ہی کرنا چاہیئے۔برطانیہ پہلے ہی عراق میں داعش کے خلاف بمباری میں حصہ لے رہا ہے۔پیرس میں ہونے والے مہلک حملوں کے بعد، جس میں کم از کم 130 افراد ہلاک اور 300 سے زائد زخمی ہوئے، فرانس نے شام میں داعش کے اہداف کو نشانہ بنانے کے لیے حملے تیز کردیے ہیں۔فرانس نے پیر کے روز لڑاکا طیارے لے جانے والا اپنا واحد بحری بیڑہ، چارلس ڈی گال بحیر روم میں تعینات کر دیا ہے، تاکہ وہ قبرص کا متبادل فوجی ہوائی اڈا استعمال کر سکے۔

مزید :

عالمی منظر -