توہین عدالت کی درخواست پر چیئرمین پی آئی اے ناصرجعفر سے 16 دسمبر تک جواب طلب

توہین عدالت کی درخواست پر چیئرمین پی آئی اے ناصرجعفر سے 16 دسمبر تک جواب طلب

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہورہائیکورٹ نے توہین عدالت کی درخواست پر نوٹس جاری کرتے ہوئے چیئرمین پی آئی اے ناصرجعفر سے 16 دسمبر تک جواب طلب کرلیا۔ جسٹس شمس محمودمرزاکی عدالت میں چیئرمین پی آئی اے ناصرجعفرکے خلاف توہین عدالت کی درخواست کی سماعت ہوئی۔درخواست گزارفلائٹ آپریشنزلاہورکی برطرف ایئرہوسٹس توصیف اشرف کے وکیل نے موقف اختیارکیاکہ وہ ایئرہوسٹس کے عہدے پربھرتی ہوئی جبکہ سیکرٹری اسٹیبلشمنٹ کے ایماپر29اگست 2008ء کوعہدے سے ہٹادیاگیااوروہ بغیرتقرری کے 7سال تک کام کرتی رہی۔مینجرہیومن ریسورس فلائٹ سروس پی آئی اے لاہورنے انکوائری اورشوکازنوٹس جاری کئے بغیراسے 8جون 2015ء کوعہدے سے برطرف کردیا۔درخواست میں مزیدکہاگیاہے کہ پی آئی اے کارپوریشن ایکٹ 1956ء کے سیکشن 29کے تحت بورڈآف ڈائریکٹرزہی اس کے خلاف کارروائی یابرطرفی کااختیاررکھتاہے لیکن منظوری یاباقاعدہ انکوائری کرائے بغیربرطرفی کااقدام بدنیتی پرمبنی تھا۔درخواست میں کہاگیاکہ چیئرمین پی آئی اے کواپیل کی لیکن انہوں نے کوئی فیصلہ نہیں کیاجس پرانہوں نے ہائیکورٹ سے رجوع کیا۔عدالت نے 8 جولائی 2015ء کودرخواست نمٹاتے ہوئے چیئرمین پی آئی اے کوپندرہ روزمیں زیرالتواء اپیل کافیصلہ کرنے کاحکم دیا لیکن انہوں نے فیصلہ نہیں کیاجوتوہین عدالت کے زمرے میں آتاہے۔

مزید :

علاقائی -