مسروقہ گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کی بر آمدگی یقینی بناے کیلئے انویسٹی گیشن ونگ میں علیحدہ ڈویژن قائم

مسروقہ گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کی بر آمدگی یقینی بناے کیلئے انویسٹی گیشن ...

  

 لا ہور (خبر نگا ر )ڈی آئی جی انویسٹی گیشن سلطان چوہدری نے کہا ہے کہ گاڑیوں اور موٹر سائیکل چوروں کے منظم گروہوں کو قانون کے کٹہرے میں لانے اور شہریوں کی چوری شدہ گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کی برآمدگی یقینی بنانے کے لئے انویسٹی گیشن ونگ میں ایس پی اینٹی کار لفٹنگ سٹاف کی نگرانی میں اینٹی کار و موٹر سائیکل سٹاف کا علیحدہ ڈویژن تشکیل دیا گیا ہے جس نے اپنے آغاز کے چند ہفتوں میں ہی لاہور کے مختلف تھانوں سے چوری ہونے والی ایک کروڑ روپے سے زائد مالیت کی 17 کاریں اور 4 موٹر سائیکلیں برآمد کر لی ہیں جو اس بات کا واضح ثبوت ہے کہ اینٹی کار لفٹنگ سٹاف کے علیحدہ ڈویژن کی تشکیل کے مثبت نتائج سامنے آرہے ہیں ۔ یہ بات انہوں نے اپنے دفتر میں پریس کانفرنس کے دوران بتائی، اس موقع پر ایس پی سی آر او عمر ریاض چیمہ اور ایس پی Avls ملک اویس بھی موجود تھے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ آئند ہ چند ہفتوں میں شہر کے تمام داخلی اور خارجی راستوں پر ماڈل ناکے لگائے جائیں گے جن میں اینٹی کار لفٹنگ سٹاف کے عملے کے علاوہ ٹریفک پولیس ، محکمہ ایکسائز ،ضلعی انتظامیہ اور موبائل سکواڈ کے اہلکار بھی شامل ہونگے ۔ ان ناکوں پرپائلٹ پروجیکٹ کے طور پر ایسی مشین نصب کی جارہی ہے جو گاڑیوں کی نمبر پلیٹ پڑھ کر یہ بتا سکے گی کہ یہ گاڑی چوری کی ہے یا نہیں ۔اس موقع پر ایس پی سی آر او عمر ریاض چیمہ نے صحافیوں کے سوالوں کے جواب میں بتایا کہ ڈی ایس پیAvls ماڈٖل ٹاؤن سلیم مختار بٹ کی سربراہی میں پولیس ٹیم نے صوبہ کے پی کے میں جا کر کئی روز کی محنت کے بعد لاہورکے مختلف تھانوں سے چوری ہونے والی ایک کروڑ روپے سے زائد مالیت کی 4 ہنڈا، 3 ٹیوٹا کرولا اور 10 سوزوکی کاروں سمیت 17 کاریں اور 4 موٹرسائیکلیں برآمد کیں جنہیں آج ان کے حقیقی وارثان کے سپرد کیا جا رہا ہے ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ ان برآمد شدہ گاڑیوں میں 2 گاڑیاں ایسی ہیں جو لاہو رکے دو سینئر صحافیوں منور بٹ اور مبشر حسین کی ملکیت تھیںیہ گاڑیاں بھی آج ان دونوں صاحبان کے سپرد کی جارہی ہیں۔ صحافیوں کے سوالوں کا جواب دیتے ہوئے ڈی آئی جی انویسٹی گیشن نے کہا کہ اینٹی کار لفٹنگ سٹاف کو 7 نئی گاڑیاں دے دی گئی ہیں جبکہ اس ڈویژن کی کارکردگی کو مزیدبہتر بنانے کے لئے مزید گاڑیاں بھی مہیا کی جا رہی ہیں ۔ ایک اور سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہAvls کی کار کردگی کا جائزہ ماہانہ وار میں خود لیا کروں گا جبکہ گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کی چوری کی روک تھام کے لئے تمام دوستیاب وسائل بروئے کار لائیں جائیں گے۔

مزید :

علاقائی -