وزیراعلٰی کا خواتین کے حقوق سے متعلق قوانین پر عملدرآمد یقینی بنانیکی ہدایت

وزیراعلٰی کا خواتین کے حقوق سے متعلق قوانین پر عملدرآمد یقینی بنانیکی ہدایت

 پشاور( پاکستان نیوز)خواتین کی حیثیت کے بارے میں صوبائی کمیشن کو مزید مضبوط بنانے کیلئے صوبے کے باقی 13اضلاع میں بھی ضلعی خواتین کمیشن قائم کئے جائیں اور خواتین کے حقوق کے تحفظ کیلئے متعلقہ قوانین پر ان کی روح کے مطابق عمل درآمد یقینی بنایا جائے۔ یہ ہدایات وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے آج وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ میں صوبائی کمیشن برائے حیثیت خواتین کے وفد سے بات چیت کرتے ہوئے جاری کیں۔ وفد نے کمیشن کی سربراہ نیلم طورو کی قیادت میں وزیراعلیٰ سے ملاقات کی جس میں وزیراعلیٰ کی معاون خصوصی ڈاکٹر مہر تاج روغانی، ایم پی اے معراج ہمایون خان اور کمیشن کی بعض دیگر اراکین بھی شامل تھیں۔ وزیراعلیٰ نے کمیشن کی چیئرپرسن اور اراکین کو یقین دلایا کہ موجودہ صوبائی حکومت کی وومن پالیسی پر عملدرآمد کیلئے کمیشن کو حکومت کی جانب سے ہر ممکن مدد اور تعاون فراہم کیا جائے گا۔ انہوں نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ وہ کمیشن کے ایجنڈا پر عملدرآمد کی راہ میں حائل تمام رکاوٹیں دور کریں۔ انہوں نے خواتین کو ہر قسم کے تشدد سے محفوظ رکھنے اور ان کے حقوق کے تحفظ کے حوالے سے خیبر پختونخوا حکومت کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ کے ایک افسر کو بھی متعین کیا جو کمیشن کو مزید فعال بنانے کیلئے مختلف محکموں سے متعلق امور میں رکاوٹیں دور کرکے اس بارے میں پیش رفت سے وزیراعلیٰ کو روزانہ کی بنیا د پر رپورٹ پیش کرے گا۔ اجلاس کے دوران کمیشن کی خود مختاری اور خواتین پر گھریلو تشدد اور ان کے کام کے مقامات پر انہیں ہراساں کرنے سے متعلق امور بھی زیر بحث آئے اور وزیراعلیٰ نے کمیشن کو ہدایت کی کہ وہ اس بارے میں بل کا مسودہ صوبائی کابینہ کے غور کیلئے جلد پیش کرے

پشاور( پاکستان نیوز)وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے ہر ی پور اور ایبٹ آباد کے اضلاع کیلئے چھ نئے ترقیاتی منصوبوں کی منظوری دے دی ہے جن میں حویلیاں سے دھمتوڑ تک بائی پاس روڈ کی تعمیر اور ہری پور میں جدید انجینئرنگ کالج کا قیام بھی شامل ہے وزیراعلیٰ نے بتایا کہ ہری پور یونیورسٹی کو بین الاقوامی معیار کے مطابق اپ گریڈ کرنے کا منصوبہ بھی شروع کیا جائے گا ان منصوبوں کی منظوری اُنہوں نے منگل کے روز وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ میں دونوں اضلاع کے نئے ترقیاتی منصوبوں پر غور کیلئے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے دی اجلاس میں وزیراعلیٰ کے مشیر برائے مواصلات و تعمیرات اکبر ایوب خان، وزیراعلیٰ کے معاون خصوصی برائے اطلاعات و اعلیٰ تعلیم مشتاق احمد غنی، پی ٹی آئی کے رہنما یوسف ایوب خان، سابق رکن صوبائی اسمبلی نثار صفدر خان، وزیراعلیٰ کے سپیشل سیکرٹری ارشد مجید مہمند اور دیگر متعلقہ افسران نے شرکت کی اجلاس میں عوامی نمائندوں کی تجاویز پر نئی سکیموں پر تفصیلی غور کے بعد وزیراعلیٰ نے چھ منصوبوں کی منظوری دے دی جن میں ہری پور میں جدید سہولتوں سے آراستہ انجینئرنگ کالج و انفارمیشن ٹیکنالوجی ٹریننگ سنٹرکا قیام اور ہری پور شہر میں ایک اضافی سپورٹس گراؤنڈ تعمیر کرنے کے منصوبے شامل ہیں جبکہ ایبٹ آباد میں حویلیاں سے دھمتوڑ تک بائی پاس روڈ کی تعمیر، جھنگڑا ڈیم حویلیاں کے زیر تعمیر منصوبے کے تحت ایک لنک روڈ کی تعمیر اور حویلیاں کیلئے زرعی اراضی کو کٹاؤ سے بچانے کے منصوبے کی منظوری بھی دی گئی ایوب پل حویلیاں سے دھمتوڑ ایبٹ آباد تک تقریباً ایک ارب روپے کی لاگت سے تعمیر کئے جانے والے 18 کلومیٹر بائی پاس روڈ سے نتھیاگلی اور مری جانے والی ٹریفک کو سہولت ملے گی اور اس ٹریفک کو گنجان آباد ایبٹ آباد شہر سے گزرنے کی ضرورت نہیں پڑے گی اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ہری پور کیلئے منظورکردہ انجینئرنگ کالج کو یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی پشاور سے ملحق کیا جائے گا وزیراعلیٰ نے اجلاس کے دوران ضلع ہری پور کیلئے پہلے سے منظور شدہ 33 سپورٹس گراؤنڈزکی تعمیر کیلئے ساڑھے سترہ کروڑ روپے جاری کرنے کی بھی ہدایت کی وزیراعلیٰ نے اس موقع پر انکشاف کیا کہ یونیورسٹی آف ہری پور کو بین الاقوامی معیار کے مطابق اپ گریڈ کیا جائے گا جس کیلئے ایک غیر ملکی کنسورشیم فنی اور مالی تعاون فراہم کرے گاوزیراعلیٰ یوسف ایوب خان کی جانب سے ہری پور کے دورے کی دعوت بھی قبول کر لی اس دورے میں وزیراعلیٰ ہری پور میں متعدد مکمل شدہ منصوبوں کے افتتاح کے علاوہ ہری پور بائی پاس سمیت بعض نئے منصوبوں کا سنگ بنیاد بھی رکھیں گے

مزید : پشاورصفحہ اول